Sunday , August 19 2018
Home / Top Stories / ’’نہ کھاؤں گا نہ کھانے دوں گا کا وعدہ کیا ہوا ؟ ‘‘

’’نہ کھاؤں گا نہ کھانے دوں گا کا وعدہ کیا ہوا ؟ ‘‘

صاحب کی خاموشی کا راز جاننے ملک کے عوام بے قرار : راہول گاندھی
نئی دہلی ۔19 فبروری ۔(سیاست ڈاٹ کام) کانگریس صدر راہول گاندھی نے نیرو مودی بینک دھوکہ دہی اسکام پر وزیراعظم نریندر مودی کو تازہ طنز و تنقید کا نشانہ بنایا اور الزام عائد کیا کہ وزیراعظم جنھوں نے کبھی رشوت سے پاک ہندوستان بنانے کا وعدہ کیا تھااب خود رشوت خوروں اور دھوکہ بازوں کی حوصلہ افزائی اور پشت پناہی کررہے ہیں۔ راہول نے ٹوئیٹر پر لکھا کہ ’’پہلے للت مودی ، پھر ملیا اور اب نیرومودی چکمہ دے کر فرار ہوگئے ۔ کہاں ہے وہ چوکیدار جس نے کہا تھا کہ ’’نہ کھاؤں گا نہ کھانے دوں گا ؟‘‘ ۔ صاحب کی خاموشی کا راز جاننے کو جنتا ( عوام ) بے قرار ہے ۔ ان ( مودی ) کے مہربند ہونٹ یہ چیخ چیخ کر کہہ رہے ہیں کہ ان ( وزیراعظم ) کی وفاداریاں کدھر ہیں ‘‘ ۔ نہرو گاندھی خاندان کے سیاسی وارث یہ بتانا چاہتے تھے کہ پہلے تو آئی پی ایل کے بے تاج بادشاہ للت مودی رشوت خوری ، رقمی ہیرپھیر اور دھوکہ دہی کے مجرم پائے جانے کے بعد ملک چھوڑکر برطانیہ فرار ہوگئے ۔ شراب کے تاجر وجئے ملیا بھی 2016 ء میں 9000 کروڑ روپئے کے قرض کی نادہندگی پر مقدمہ درج کئے جانے سے قبل ہی لندن فرا ہوگئے اب 11,400 کروڑ روپئے کی دھوکہ دہی کا تازہ ترین واقعہ منظرعام پر آیا ہے ۔ راہول گاندھی نے گزشتہ روز وزیراعظم مودی اور وزیر فینانس ارون جیٹلی سے کہا تھا کہ وہ اس مسئلہ پر لب کشائی کریں اور اس قسم کا رویہ اختیار نہ کریں جس سے ظاہر ہوتا ہے کہ وہ ہی بینک لوٹنے کے سب سے بڑے اسکام کے ’مجرم ‘ ہیں۔

TOPPOPULARRECENT