Thursday , September 20 2018
Home / ہندوستان / نیا شوشہ: علماء یکطرفہ فتوی بند کریں، عورتوں کو بھی قاضی بنائیں

نیا شوشہ: علماء یکطرفہ فتوی بند کریں، عورتوں کو بھی قاضی بنائیں

بریلی، 9 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) ایک بار میں دیئے جانے والے تین طلاق کے خلاف بغاوت کا جھنڈا اٹھانے والی اترپردیش کے بریلی کے مشہور درگاہ اعلی حضرت کے خاندان کی بہو ندا خان نے حلالہ اور بچوں کی شادی کے خلاف مہم شروع کی ہے ۔انہوں نے صحافیوں سے اتوار دیر رات بات کرتے ہوئے ایسے فتووں کو بند کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ زیادہ تر فیصلے یکطرفہ اور عورتوں کے خلاف ہیں۔ انہوں نے فتووں پر سوال اٹھاتے ہوئے کہا کہ مولوی ہمیشہ مردوں کے حق میں ہی فتوی دیتے ہیں۔ خواتین کے حقوق کو نظر انداز کر دیا گیا ہے ۔ لہذا، ایک عورت کو قاضی کا کردار ادا کرنا چاہئے ۔ اس سے ہی شریعت کی آڑ میں خواتین کے ساتھ زیادتی رک سکے گی۔

TOPPOPULARRECENT