Thursday , August 16 2018
Home / Top Stories / نیروو مودی کیخلاف سی بی آئی انٹرپول سے رجوع، میہول کی بھی تلاش

نیروو مودی کیخلاف سی بی آئی انٹرپول سے رجوع، میہول کی بھی تلاش

گیتانجلی گروپ کیخلاف تازہ ایف آئی آر ، متعدد دفاتر پر دھاوے
نیروو اور میہول کے پاسپورٹس معطل، گیتانجلی کو بالواسطہ قرض کا بھی انکشاف

نئی دہلی ، 16 فبروری (سیاست ڈاٹ کام) ہزاروں کروڑ روپئے کی دھوکہ دہی پر مبنی بینک معاملتوں میں مبینہ طور پر ملوث و مفرور ارب پتی جویلری ڈیزائنر نیروو مودی کو قانون کے کٹھہرے تک لانے کیلئے حکومت اور سرکاری تحقیقاتی ادارے سرگرم ہوگئے ہیں۔ سی بی آئی جنوری کے پہلے ہفتے میں ملک چھوڑ دینے والے ملزم کا پتہ چلانے کیلئے انٹرپول سے رجوع ہوا ہے جبکہ وزارت امور خارجہ نے آج فوری اثر کے ساتھ نیروو اور اُن کے بزنس پارٹنر میہول چوکسی کے پاسپورٹ چار ہفتے کیلئے معطل کردیئے ہیں۔ پنجاب نیشنل بینک (پی این بی) میں 11,400 کروڑ روپئے کے مبینہ فراڈ میں انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ نے غیرقانونی رقمی لین دین کی تحقیقات کے سلسلے میں نیروو اور میہول کو سمن بھی جاری کردیئے کہ ایک ہفتے میں حلفیہ بیان کیلئے حاضر ہوں۔ اس ضمن میں نوٹسیں دونوں بزنسمین کے فرمس کے ڈائریکٹرس کو حوالے کرنا پڑا کیونکہ دونوں ہی ملک میں دستیاب نہیں ہیں۔ اس دوران ملک کے سب سے بڑے قرض دہندہ ایس بی آئی نے کہا کہ اس نے نیروو مودی کو پنجاب نیشنل بینک کے جاری کردہ مکتوب حلفنامہ کے پیش نظر 212 ملین امریکی ڈالر (تقریباً 1.36 کروڑ روپئے) کی رقمی طمانیت دی ہے، لیکن مفرور جویلری ڈیزائنر کیلئے راست کوئی قرض نہیں دیا گیا۔ ایس بی آئی چیئرمین رجنیش کمار نے آج کوچی (کیرالا) میں میڈیا کے نمائندوں کو بتایا کہ اُن کے بینک کا ملزم نیروو سے کوئی راست تعلق نہیں ہے لیکن پی این بی کے جاری کردہ ’ایل او یو‘ کی اساس پر بینک نے نیروو مودی کو 212 ملین ڈالر کا قرض دیا ہے۔ تاہم، رجنیش نے بتایا کہ دیگر ملزم اور نیروو کے اَنکل میہول کی ملکیت والی کمپنی گیتانجلی جیمس کو بینک نے راست طور پر کچھ قرض دیا جسے انھوں نے چھوٹا قرض قرار دیتے ہوئے کہا کہ ایس بی آئی اس تعلق سے فکرمند نہیں ہے۔ سی بی آئی نے میہول کے گیتانجلی گروپ کے خلاف تازہ ایف آئی آر درج رجسٹر کرلیا ہے۔ عہدیداروں نے کہاکہ تازہ کیس پی این بی کی شکایت مورخہ 13 فروری کی بنیاد پر درج ہوئی جس کے مطابق بینک کو 4,886 کروڑ روپئے سے زیادہ کا مبینہ نقصان ہوا ہے۔ تحقیقاتی ایجنسی نے آج گیتانجلی گروپ کے مختلف دفاتر واقع ممبئی، پونے، سورت، جئے پور، حیدرآباد اور کوئمبتور میں دھاوے کرتے ہوئے تلاشی مہم چلائی۔ انٹر پول کی ویب سائٹ سے معلوم ہوا ہے کہ سی بی آئی 46 سالہ نیروو مودی اور اُن کی فیملی کا پتہ چلانے کے لئے رجوع ہوا ہے۔ سی بی آئی کو اعتماد ہے کہ جلد ہی مودی اور ان کی فیملی کا اتہ پتہ معلوم ہوجائے گا۔ دریں اثناء وزارت اُمور خارجہ نے ملزم تاجرین نیروو اور میہول کو ایک ہفتہ کا وقت دیا ہے کہ وہ جواب دیں کہ کیوں اُن کے پاسپورٹس منسوخ نہیں کئے جانے چاہئیں۔ وزارت کے بیان میں بتایا گیا کہ اگر وہ مقررہ وقت میں جواب دینے میں ناکام ہوجاتے ہیں تو یہی متصور ہوجائے گا کہ اُن کے پاس کوئی جواب نہیں اور وزارت اُن کے پاسپورٹس منسوخ کردے گی۔ اُدھر ایس بی آئی چیرمین رجنیش سے جب دریافت کیا گیا کہ سارے جیمس اینڈ جیویلری سیکٹر کو بینک کی طرف سے کتنا قرضہ دیا گیا، اُنھوں نے کہاکہ یہ دیسی سطح پر جملہ قرض کا ایک فیصد سے بھی کم ہے۔ دیسی سطح پر 16 لاکھ کروڑ روپئے کا قرض درج ہے اور ہیرے جواہرات کے شعبے کو 13 ہزار کروڑ روپئے بطور قرض دیئے گئے ہیں جو ایک فیصد سے کم ہوتے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT