Wednesday , November 22 2017
Home / شہر کی خبریں / نیلوفر ہاسپٹل میں بستروں کی تعداد بڑھ گئی نرسوں کی کمی

نیلوفر ہاسپٹل میں بستروں کی تعداد بڑھ گئی نرسوں کی کمی

تمام سرکاری دواخانوں میں کم اسٹاف کی شکایت ، 5 سال سے کوئی تقررات نہیں
حیدرآباد ۔ 15 ۔ نومبر : ( سیاست نیوز ) : حکومت نے 3 سال تاخیر کے بعد بھلے ہی نیلوفر ہاسپٹل کے کرٹیکل کیر بلاک کا آغاز کیا ہو لیکن اس دواخانہ میں نرسنگ اسٹاف کی شدید کمی ہے اور سارے تلنگانہ میں تمام سرکاری دواخانوں میں نرسوں کی کمی ہے ۔ اس کی وجہ یہی ہے کہ گذشتہ 5 سال سے زائد عرصہ سے نرسوں کا تقرر نہیں ہوا ہے ۔ نرسنگ اسٹاف کی تنظیموں نے بارہا حکومت سے نرسوں کی تعداد میں اضافہ کے لیے نمائندگی کی ہے ۔ لیکن متواتر حکومتوں نے نرسنگ اسٹاف کے تقررات کے لیے کوئی پہل نہیں کی۔ انڈین نرسنگ کونسل نے بستروں کی تعداد کے تناسب سے نرسوں کے تقرر کا جو معیار اور قاعدہ مقرر کیا ہے اس کی پابندی کی جانی چاہئے ۔ نیلوفر ہاسپٹل میں نئے بلاک کے قیام کے بعد نرسنگ اسٹاف کی قلت نے سنگین شکل اختیار کی ہے ۔ ہاسپٹل میں جملہ 66 نرسیں ہیں ۔ نئے بلاک کے قیام کے ساتھ بستروں کی تعداد بڑھ گئی جب کہ نرسوں کی تعداد جوں کی توں ہے ۔ نئے بلاک کا افتتاح وزیر صحت جی لکشما ریڈی نے کیا ۔ 15 کروڑ روپئے مالیت کے عصری طبی آلات فراہم کئے گئے ۔ اس بلاک میں پیڈیا ٹرک سرجریز ہوں گے ۔ وزیر صحت نے اسٹاف کی تعداد میں آئندہ چند ماہ میں اضافہ کرنے کا تیقن دیا ہے ۔ نرسنگ اسٹاف کا کہنا ہے کہ نرسوں کی تعداد بڑھا کر چھ سو کرنا چاہئے ۔ ہاسپٹل کی عمارتیں آمنے سامنے ہیں اور نرسوں کی ایک عمارت سے دوسری عمارت تک بھاگ دوڑ کرنی پڑتی ہے ۔ جب کہ درمیان کی سڑک پر کافی ٹریفک ہوتی ہے ۔ گذشتہ دنوں عثمانیہ جنرل ہاسپٹل کے نرسنگ اسٹاف نے اچانک ہڑتال شروع کردی تھی ۔ وزیر صحت کی طرف سے نرسوں کی تعداد میں اضافہ کرنے کے تیقن کے بعد نرسنگ اسٹاف نے ہڑتال ختم کردی ۔ عثمانیہ ہاسپٹل میں نرسوں کی 60 جائیدادوں پر تقررات ہونا ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT