Friday , April 27 2018
Home / عرب دنیا / نیوکلیئر معاہدہ سے دستبردار ہوکر امریکہ پچھتائے گا : حسن روحانی

نیوکلیئر معاہدہ سے دستبردار ہوکر امریکہ پچھتائے گا : حسن روحانی

تہران ۔ 19 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) صدر ایران حسن روحانی نے آج ایک اہم بیان دیتے ہوئے بالواسطہ طور پر امریکہ کو انتباہ دیا کہ اگر وہ نیوکلیئر معاہدہ سے دستبردار ہوگا تو اندرون ایک ہفتہ ہمارا کیا ردعمل ہوگا، امریکہ کو یہ بھی معلوم ہوجائے گا۔ انہوں نے کہا کہ ایران اس معاہدہ سے دستبردار ہونے والا پہلا ملک نہیں ہوگا بلکہ یہ امریکہ ہوگا اور اسے اپنے اس فیصلہ پر پچھتانا پڑے گا۔ یاد رہیکہ امریکی صدر ڈونالڈٹرمپ نے نیوکلیئر معاہدہ سے دستبردار ہونے کی دھمکی دی ہے اور 12 مئی تک ایران پر نئی تحدیدات عائد کرنے کا حکم بھی دیا ہے اور یہ انتباہ اسی صورت میں ٹل سکتا ہے جب ایران کے نیوکلیئر اور میزائل پروگرام پر سخت تحدیدات عائد کی جائیں۔ روحانی نے اس موقع پر ٹرمپ کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے کہا کہ اقتدار پر آئے موصوف کو صرف 15 ماہ ہی گزرے ہیں اور اب تک ان کے ریمارکس اور برتاؤ میں متعدد اتار چڑھاؤ دیکھنے کا ہم سب کو موقع ملا ہے۔ یاد رہیکہ نیوکلیئر معاہدہ میں امریکہ کے علاوہ دیگر شراکت داروں میں برطانیہ، فرانس، جرمنی، چین، روس اور یوروپی یونین شامل ہیں اور ان تمام کا یہ ماننا ہیکہ ایران نیوکلیئر معاہدہ کی دیانتداری سے پاسداری کررہا ہے۔ حسن روحانی نے کہاکہ اگر امریکہ اس نیوکلیئر معاہدہ سے دستبردار ہوتا ہے تو دنیا کی نظروں میں امریکہ کی تذلیل ہوگی اور لوگ یہی کہیں گے کہ امریکہ نے معاہدہ کی پاسداری نہیں کی۔

TOPPOPULARRECENT