نیویارک کے 2 پولیس ملازمین کا قتل ،حملہ آور کی خودکشی

نیوریارک 21 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) نیو یارک پولیس کے دو آفیسرس کو قریب سے گولی مارکر ہلاک کردیا گیا۔ ایک شخص نے ان کی گشتی کار میں بالکل قریب سے گولیاں چلائیں بعدازاں حملہ آور نے بھی اپنی بندوق سے خودکشی کرلی۔ عہدیداروں نے کہا کہ نیویارک پولیس عہدیداروں کا یہ قتل ایک سیاہ فام نہتے شخص کی پولیس کے ہاتھوں ہلاکت کے خلاف ملک گیر احتجاجی مظ

نیوریارک 21 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) نیو یارک پولیس کے دو آفیسرس کو قریب سے گولی مارکر ہلاک کردیا گیا۔ ایک شخص نے ان کی گشتی کار میں بالکل قریب سے گولیاں چلائیں بعدازاں حملہ آور نے بھی اپنی بندوق سے خودکشی کرلی۔ عہدیداروں نے کہا کہ نیویارک پولیس عہدیداروں کا یہ قتل ایک سیاہ فام نہتے شخص کی پولیس کے ہاتھوں ہلاکت کے خلاف ملک گیر احتجاجی مظاہروں کے چند ہفتوں کے درمیان کیا گیا ہے ۔ مہلوک پولیس عہدیداروں کی ونجن لیوا اور رافل رموس کی حیثیت سے شناخت کی گئی ہے ۔ 28 سالہ بندوق بردار کی اسمعیل برنسلے کی حیثیت سے شناخت کی گئی ۔ یہ فائرنگ بروکلین میں پیش آئی ۔ جب حملہ آور نے پولیس کی کار میں بیٹھے ہوئے دو عہدیداروں کو گولی ماری ۔ سیاہ فام حملہ آور جو بلیٹ مورے سے 300 کیلو میٹر کی ڈرائیو کر کے یہاں پہونچا تھا، اپنے سوشیل میڈیا میں لکھا تھا کہ وہ دو سیاہ فام افراد ارک گارنڈ اور مائیکل برازی کی موت کا بدلہ لینے کیلئے پولیس آفیسرس کو ہلاک کرنے کا منصوبہ رکھتا ہے ۔ ان دونوں سیاہ فام باشندوں کو پولیس عہدیداروں نے ہلاک کیا تھا ۔ نیو یارک میئر بل ڈی بلا سیو نے کہا کہ اگرچیکہ ہم کو ہنوز تفصیلات کا انتظار ہے اس واقعہ سے واضح ہوتا ہے کہ یہ ایک قتل کا واقعہ ہے ۔ ان عہدیداروں کو ہلاک کرنے کی نیت سے ہی نشانہ بنایا گیا تھا۔ اس ہلاکت پر ہمارا شہر غم زدہ ہے ہمارے دل صدمہ سے دوچار ہیں ۔ ہمارے پورے شہر کو اسی طرح کے گھناونے جرائم کا خطرہ ہے ۔ نیو یارک پولیس کمشنر ولیم رائن نے کہا کہ راموس اور لیو نیویارک کے بہترین پولیس آفیسرس میں سے تھے ۔ ونجن لیو سات سال سے پولیس میں کام کررہے تھے جبکہ رافیل راموس دو سال قبل ہی پولیس میں شامل ہوئے تھے ۔ انہیں قریب سے گولی ماری گئی ہے ۔ پولیس عہدیداروں کو ہلاک کرنے کے بعد حملہ آور نزدیکی سب وے کی جانب دوڑا جہاں اس نے خود کو گولی مارکر خودکشی کرلی۔ اس نے حملہ سے قبل اپنی گرل فرینڈ کو بھی گولی مار کر زخمی کیا تھا۔

TOPPOPULARRECENT