Monday , January 22 2018
Home / دنیا / نیٹو کا افغان چوکی پر حملہ، 5 فوجی ہلاک

نیٹو کا افغان چوکی پر حملہ، 5 فوجی ہلاک

کابل ، 6 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) نیٹو نے افغانستان کے مشرقی صوبہ لوگر میں جمعرات کی صبح فضائی حملہ کیا ہے۔ اس حملے کے نتیجے میں افغان نیشنل آرمی کے پانچ جوان ہلاک اور 17 زخمی ہوگئے ہیں۔ فوری طور پر اس حملے کی وجوہات سامنے نہیں آسکی ہیں۔ صوبائی گورنر کے ترجمان دین محمد درویش نے اس واقعے کی تصدیق کردی ہے۔ بعد ازاں افغانستان میں سرگرم نیٹو

کابل ، 6 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) نیٹو نے افغانستان کے مشرقی صوبہ لوگر میں جمعرات کی صبح فضائی حملہ کیا ہے۔ اس حملے کے نتیجے میں افغان نیشنل آرمی کے پانچ جوان ہلاک اور 17 زخمی ہوگئے ہیں۔ فوری طور پر اس حملے کی وجوہات سامنے نہیں آسکی ہیں۔ صوبائی گورنر کے ترجمان دین محمد درویش نے اس واقعے کی تصدیق کردی ہے۔ بعد ازاں افغانستان میں سرگرم نیٹو فورسز نے بھی اس کارروائی کی تصدیق کر دی ہے۔ تاہم نیٹو ترجمان نے افغان فوجیوں کی ہلاکت کو ایک حادثہ قرار دیا ہے۔ مبصرین کا کہنا ہے کہ اس واقعے سے افغان حکومت اور نیٹو فورسز کے درمیان کشیدگی کی زد میں تعلقات پر مزید منفی اثر پڑے گا۔ ترجمان کے مطابق یہ فضائی حملہ علی الصبح ساڑھے تین بجے کیا گیا۔ ایک عالمی خبر رساں ادارہ کے مطابق زخمی فوجیوں کی تعداد آٹھ ہے۔ صوبائی گورنر خلیل اللہ کمال نے موقع پر جا کر شواہد کی بنیاد پر کہا ہے کہ یہ کارروائی امریکی ڈرون طیاروں کی مدد سے کی گئی ہے۔ کارروائی کے نتیجے میں فوجی پوسٹ مکمل طور پر تباہ ہو گئی ہے۔ یہ پوسٹ ایک پہاڑی چوٹی پر قائم ہے اور اس سے پہلے امریکی فوجیوں کے پاس رہی ہے۔ ان دنوں اسے افغان فوج استعمال کر رہی تھی۔

القاعدہ پاکستان کے قبائیلی علاقوں میں بدستور سرگرم : پنٹگان
واشنگٹن ۔ 6 مارچ ۔ ( سیاست ڈاٹ کام ) پنٹگان کے ایک اعلیٰ کمانڈر نے کہا ہے کہ القاعدہ بدستور پاکستان کے قبائیلی علاقوں سے سرگرمیاں جاری رکھے ہوئے ہے۔ جنرل لائیڈ آسٹن نے یہ بھی کہا کہ ہندوستان اور پاکستان کے درمیان کشمیر کے بارے میں دیرینہ کشیدگیاں علاقائی استحکام کیلئے خطرہ ہیں۔ انھوں نے کہا کہ القاعدہ کا پاکستانی وفاقی زیرانتظام قبائیلی علاقوں میں وجود ہے اور کسی حد تک مشرقی افغانستان سے بھی سرگرم ہے ۔

TOPPOPULARRECENT