Saturday , June 23 2018
Home / Top Stories / نیپال کے داخلی معاملات میں مداخلت نہیں کی جائیگی : مودی

نیپال کے داخلی معاملات میں مداخلت نہیں کی جائیگی : مودی

کٹھمنڈو 3 اگسٹ ( سیاست ڈاٹ کام ) نیپال کو یہ تیقن دیتے ہوئے کہ ہندوستان اس کے داخلی امور میں مداخلت نہیں کریگا وزیر اعظم نریندر مودی نے آج واضح کیا کہ نیپال کی سرحدات خلا پاٹنے کا برج ہونی چاہئیں رکاوٹیں نہیں ۔ انہوں نے نیپال کیلئے ایک بلین ڈالرس کے کریڈٹ کا بھی اعلان کیا ہے ۔ مودی نے نیپال کی دستور ساز اسمبلی سے اپنے خطاب میں کہا کہ ہن

کٹھمنڈو 3 اگسٹ ( سیاست ڈاٹ کام ) نیپال کو یہ تیقن دیتے ہوئے کہ ہندوستان اس کے داخلی امور میں مداخلت نہیں کریگا وزیر اعظم نریندر مودی نے آج واضح کیا کہ نیپال کی سرحدات خلا پاٹنے کا برج ہونی چاہئیں رکاوٹیں نہیں ۔ انہوں نے نیپال کیلئے ایک بلین ڈالرس کے کریڈٹ کا بھی اعلان کیا ہے ۔ مودی نے نیپال کی دستور ساز اسمبلی سے اپنے خطاب میں کہا کہ ہندوستان اپنے پڑوسیوں کے ساتھ سفارتی اور معاشی مصروفیت کو بہتر بنانا چاہتا ہے ۔ وہ چاہتا ہے کہ نیپال ایک ترقی یافتہ ملک بن جائے ۔ نیپال کے داخلی امور میں ہندوستان کی مداخلت سے متعلق اندیشوں کو مسترد کرتے ہوئے وزیر اعظم نے کہا کہ ہندوستان نیپال کو کسی بات کیلئے پابند کرنے کا ارادہ نہیں رکھتا اور اسے اپنی راہیں خود تلاش کرنی چاہئیں تاکہ ایک مستحکم اور خوشحال جمہوریہ بن سکے ۔ انہوں نے کہا کہ نیپال حقیقی معنوں میں ایک خود مختار ملک ہے ۔ ہندوستان ہمیشہ کہتا رہا ہے کہ اس کے داخلی معاملات میں مداخلت کرنا ہمارا کام نہیں ہے بلکہ ہندوستان نیپال اپنے لئے جو راہ تلاش کریگا اس میں مدد کریگا ۔

مودی آج دو روزہ دورہ پر نیپال پہونچے جہاں ان کا شاندار استقبال کیا گیا ۔ دستور ساز اسمبلی سے نریندر مودی کے 45 منٹ طویل خطاب کا وہاں قومی ٹی وی پر راست ٹیلیکاسٹ کیا گیا اور ان کی تقریر کے نیپالی ترجمہ کو پیش کیا گیا ۔ مودی نے اپنے خطاب میں کہا کہ وہ خیرسگالی اور محبت کے ساتھ آئے ہیں ۔ انہوں نے یہ جملہ نیپالی زبان میں کہا جس کا زبردست خیر مقدم کیا گیا ۔ انہوں نے ادعا کیا کہ ہندوستان کے نیپال سے تعلقات ہمالیہ اور گنگا کی طرح قدیم ہیں۔ مودی نے وزیر اعظم نیپال سے وفد سطح کی بات بھی کی ۔

وزیراعظم مودی کا نیپال میں شاندار خیرمقدم
ایئرپورٹ پر وزیراعظم سشیل کوئرالا اور ڈپٹی وزیراعظم بام دیوگوتم اور مان سنگھ نے استقبال کیا
کھٹمنڈو۔3اگست (سیاست ڈاٹ کام ) نیپال کے ساتھ ہندوستان کے تعلقات میں ایک نئے باب کا آغاز کرنے کے مقصد سے وزیراعظم نریندر مودی آج کھٹمنڈو پہنچ گئے ‘ جہاں ان کا شاندار خیرمقدم کیا گیا ۔ ایئرپورٹ پر ان کے ہم منصبوں نے خصوصی خیرسگالی کا مظاہرہ کرتے ہوئے ان کا پرتپاک استقبال کیا ہے ۔ نریندر مودی ہندوستان سے 17سال بعد نیپال کا دورہ کرنے والے پہلے وزیراعظم ہیں ۔ ان کا استقبال کرنے والوں میں وزیراعظم سشیل کوئرالا بھی موجود تھے جنہوں نے مودی کا خیرمقدم کرنے اپنے پرٹوکول کو بالائے طاق رکھ دیا ۔ ایئرپورٹ پر نیپال کے دیگر دو ڈپٹی وزرائے اعظم بام دیوگوتم اور پرکاش مان سنگھ بھی موجود تھے جہاں ہندوستانی اور نیپالی ترانہ بجایا گیا

۔رنگارنگ تقریب کے ساتھ وزیراعظم مودی کو گارڈ آف آنر بھی پیش کیا گیا ۔ مودی کو نیپال کی فوج نے 19توپوں کی سلامی بھی دی ۔ ایئرپورٹ کے اندر اور اطراف و اکناف بھی سخت ترین سیکیورٹی انتظامات کئے گئے تھے ۔ ایئرپورٹ سے ہوٹل تک کے راستے پر 10منٹ کی مسافت کے دوران عوام کا تانتا بندھاہوا تھا ‘ بڑی تعداد میں لوگ ہاتھوں میں پرچم تھامے مودی کا خیرمقدم کررہے تھے اور انہوں نے ایک 26سالہ نوجوان کو ہوٹل حیات میں اس کے والدین سے ملایا ۔ اس کے علاوہ نریندر مودی نیپال کے قائدین سے باہمی بات چیت کریں گے ۔ مودی کے ہمراہ قومی سلامتی مشیر اجیت کے دویول اورمعتمد خارجہ سجاتا سنگھ بھی ہیں۔ وزیراعظم نریندرمودی نے نیپال کی دستوری اسمبلی سے بھی خطاب کیاہے ۔ انہوں نے نیپالی قائدین سے کہا کہ ہند۔ نیپال دوستی کو اعلیٰ سطح تک پہنچانے کیلئے باہمی جذبہ کی ضرورت ہے۔

TOPPOPULARRECENT