Saturday , June 23 2018
Home / شہر کی خبریں / وائی ایس آر کانگریس پارٹی کو زبردست جھٹکہ ، اہم قائدین پارٹی سے مستعفی

وائی ایس آر کانگریس پارٹی کو زبردست جھٹکہ ، اہم قائدین پارٹی سے مستعفی

جی رامچندر راؤ کی ٹی آر ایس میں شمولیت کا امکان ، کڑپہ میں پارٹی قائدین کی بغاوت

جی رامچندر راؤ کی ٹی آر ایس میں شمولیت کا امکان ، کڑپہ میں پارٹی قائدین کی بغاوت
حیدرآباد ۔ 3 ۔ جنوری : ( سیاست نیوز ) : صدر وائی ایس آر کانگریس پارٹی مسٹر جگن موہن ریڈی کو تلنگانہ اور آندھرا میں زبردست جھٹکا لگا ہے ۔ پارٹی کے اہم قائدین پارٹی سے مستعفی ہوگئے ہیں علاقہ تلنگانہ کی نمائندگی کرنے والے سینئیر قائد و پارٹی ترجمان مسٹر جی رامچندر راؤ نے پارٹی سے استعفیٰ دے دیا ہے ۔ ان کے حامیوں نے بتایا کہ وہ بہت جلد حکمران جماعت ٹی آر ایس میں شامل ہوجائیں گے ۔ ایک ہفتہ قبل ایک اور ترجمان جنک پرساد وائی ایس آر کانگریس پارٹی سے مستعفی ہو کر کانگریس میں شمولیت اختیار کرلی ہے ۔ تلنگانہ کے عام انتخابات میں کھمم واحد ضلع ہے جہاں سے وائی ایس آر کانگریس پارٹی نے اسمبلی اور لوک سبھا کے لیے اپنا کھاتہ کھولا ہے ۔ مسٹر جی رامچندر راؤ بھی ضلع کھمم سے تعلق رکھتے ہیں تاہم مسز شرمیلا کے حالیہ دورے محبوب نگر کے موقع پر انہیں نظر انداز کردیا ہے جس کے بعد سرگرم رہنے والے جی رامچندر راؤ پارٹی سرگرمیوں سے دور ہوگئے ۔ انہوں نے پارٹی کے عہدے اور رکنیت سے استعفیٰ دے دیا ہے ۔ ان کے حامیوں نے بتایا کہ وہ حکمران ٹی آر ایس میں شامل ہوسکتے ہیں صدر وائی ایس آر کانگریس پارٹی مسٹر جگن موہن ریڈی کو ان کے آبائی ضلع کڑپہ میں بھی پارٹی قائدین کی بغاوت کا سامنا کرنا پڑرہا ہے ۔ وائی ایس آر کانگریس پارٹی کے رکن اسمبلی مسٹر اے نارائن ریڈی نے جگن موہن ریڈی کی کھل کر مخالفت کی ہے اور کئی ماہ سے پارٹی سرگرمیوں سے دور ہیں ان کے بارے میں یہ افواہیں گشت کررہی ہیں کہ وہ بی جے پی میں شامل ہوسکتے ہیں ۔ ساتھ ہی وائی ایس آر کانگریس پارٹی کے اہم قائدین مسٹر کے شیوا نند ریڈی اور مسٹر کے راج موہن ریڈی نے پارٹی سے مستعفی ہو کر وائی ایس آر کانگریس پارٹی میں شمولیت اختیار کرلی ہے ۔ پارٹی کے قائدین نے جگن موہن ریڈی کے انداز کارکردگی پر اعتراض کرتے ہوئے کہا کہ ان کے فیصلے پارٹی کے لیے سود مند نہیں ہیں جگن موہن ریڈی پارٹی کے لیے خدمات انجام دینے والوں کو نظر انداز کررہے ہیں ۔۔

TOPPOPULARRECENT