Tuesday , December 19 2017
Home / ہندوستان / وادی میں تشدد ، مزید دو ہلاک ، پی ڈی پی رکن اسمبلی زخمی

وادی میں تشدد ، مزید دو ہلاک ، پی ڈی پی رکن اسمبلی زخمی

سرینگر ۔ 18 جولائی ۔ ( سیاست ڈاٹ کام ) کشمیر میں آج احتجاجی عوام اور سکیورٹی فورسیس کے مابین تازہ جھڑپیں پھوٹ پڑیں جس میں دو عام شہری ہلاک ہوگئے ، جس کے ساتھ ہی 8 جولائی سے جاری بدامنی میں مرنے والوں کی تعداد 41 ہوگئی ہے ۔ پی ڈی پی رکن اسمبلی کو  ہجوم نے سنگباری کرتے ہوئے نشانہ بنایا جس میں وہ زخمی ہوگئے ۔ تشدد کے علحدہ واقعات میں جنوبی کشمیر کے قاضی گند ھ میں احتجاجیوں میں فوجی گاڑی پر سنگباری کی ، جوابی فائرنگ میں دو شہری ہلاک ہوگئے ۔ پولیس نے بتایا کہ سات افراد زخمی ہوئے ہیں جن میں ایک کی حالت نازک ہے ۔ اخبارات آج بھی مسلسل تیسرے دن شائع نہیں کئے جاسکے ۔ کرفیو وادی کشمیر کے 10اضلاع میں نافذ کیا گیا ہے تاکہ حزب المجاہدین کے کمانڈر برہان وانی کے انکاؤنٹر کے بعد جاری تشدد کو کچلا جاسکے ۔ تمام 10اضلاع میں احتیاطی اقدام کے طور پر آج بھی کرفیو جاری رہا ۔ پولیس کے ایک عہدیدار نے کہاکہ کرفیو اُس وقت تک جاری رہے گا جب تک کہ صورتحال معمول پر نہیں آجاتی ۔ فی الحال کرفیو کے دوران ہی فوج کے ساتھ احتجاجیوں کی جھڑپیں جاری ہیں ۔ باقی وادی کشمیر مکمل طور پر پُرامن ہے ۔ پی ڈی پی کے رکن اسمبلی کی کار پر پلوامہ میں کل رات سنگباری کی گئی جس کی وجہ سے رکن اسمبلی محمد خلیل زخمی ہوگئے ۔ پولیس اور نیم فوجی عملہ پوری وادی کشمیر میں تعینات کیا گیا ہے اور امتناعی احکام پر سختی سے عمل آوری کی جارہی ہے ۔ معمولات زندگی علحدگی پسندوں کی مختلف مقامات پر ہڑتال کی وجہ سے ہنوز مفلوج ہیں ۔ اسکولس اورکالجس جو آج 17روزہ گرمائی تعطیلات کے بعد کھلنے والے تھے ہنوز بند ہیں کیونکہ حکومت نے تعطیلات میں ابتر نظم و قانون کی صورتحال کے پیش نظر ایک ہفتہ توسیع کردی ہے ۔ پُرتشدد احتجاج 9جولائی سے وادی کشمیر میںجاری ہے ۔ فوج کے ساتھ جھڑپوں میں 39 افراد بشمول ایک سپاہی ہلاک اور تقریباً 3200 افراد بشمول 1500 فوجی زخمی ہوچکے ہیں ۔ علحدگی پسند گروپس حُریت کانفرنس کے دونوں گروپس اور جے کے ایل ایف نے ہڑتال کا اعلان کیا ہے ۔ 2010ء سے موسم گرما کے احتجاج کے بعد یہ رواج کشمیر میں جاری ہے ۔ علحدگی پسندوں نے اپنی ہڑتال میں آج شام تک توسیع کردی ہے ۔ موبائیل ٹیلیفون سوائے بی ایس این ایل خدمات کے وادی کشمیر میں بند کردیئے گئے ہیں ۔

TOPPOPULARRECENT