Tuesday , September 25 2018
Home / سیاسیات / وادی کشمیر سے بی جے پی کے کھاتہ میں صفر

وادی کشمیر سے بی جے پی کے کھاتہ میں صفر

سرینگر ۔ 23 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) وادی کشمیر میں پہلی انتخابی کامیابی حاصل کرنے کیلئے بی جے پی کی پرعزم اور عنصر کی کوشش کے باوجود اس کے کھاتہ میں صرف 0 ہی آسکا اور وادی میں بی جے پی کے 34 امیدواروں کے منجملہ 33 کی صمانتیں بھی ضبط ہوگئیں۔ وادی کشمیر کی 46 نشستوں کے منجملہ بی جے پی نے 34 حلقوں سے اپنے امیدوار نامزد کئے تھے۔ اور جموں و کشمیر

سرینگر ۔ 23 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) وادی کشمیر میں پہلی انتخابی کامیابی حاصل کرنے کیلئے بی جے پی کی پرعزم اور عنصر کی کوشش کے باوجود اس کے کھاتہ میں صرف 0 ہی آسکا اور وادی میں بی جے پی کے 34 امیدواروں کے منجملہ 33 کی صمانتیں بھی ضبط ہوگئیں۔ وادی کشمیر کی 46 نشستوں کے منجملہ بی جے پی نے 34 حلقوں سے اپنے امیدوار نامزد کئے تھے۔ اور جموں و کشمیر اسمبلی انتخابات میں فتح کیلئے انتھک کوشش کی تھی۔ ضلع سرینگر کے حبہ کڈل سے بی جے پی کے امیدوار موتی کول ہی اپنی ضمانت بچا سکے۔ انہیں نیشنل کانفرنس کی شمیمہ فردوس کے مقابلہ 2000 ووٹوں سے شکست ہوگئی۔ نیشنل کانفرنس کے سابق رکن پارلیمنٹ اور رکن اسمبلی محمد شفیع بھٹ کی دختر بھٹ یہ اپنی ضمانت نہیں بچا سکیں جنہیں 1,359 ووٹ حاصل ہوئے۔ حنا بھٹ کی پولنگ کے دوران ایک الیکشن آفیسر کو طمانچہ رسید کرتے ہوئے تنازعہ کھڑا کردیا تھا۔ ڈاکٹر ساستداں بننے والی حنا بھٹ کی انتخابی ریالی سے وزیراعظم نریندر مودی نے بھی خطاب کیا۔ وہ مودی کے خطاب اور اپنے والد کے اثر و رسوخ کی بنیاد پر کامیابی کی امید کررہی تھیں۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT