Friday , November 16 2018
Home / Top Stories / وادی کشمیر کے چند علاقوں میں تحدیدات

وادی کشمیر کے چند علاقوں میں تحدیدات

شہریوں کی ہلاکت پر علحدگی پسندوں کا احتجاج ، شوپیان میں دھماکہ ، ایک کمسن ہلاک
سرینگر ۔11 جولائی ۔( سیاست ڈاٹ کام ) عہدیداروں نے آج شہر سرینگر کے چند علاقوں میں تحدیدات عائد کردیں تاکہ علحدگی پسندوں کے احتجاج کو ناکام بنایا جاسکے ۔ ان قائدین نے شہریوں کی مبینہ طورپر فوج کی اندھا دھند فائرنگ سے ریاست جموں و کشمیر کے ضلع شوپیان میں مبینہ طورپر ایک نابالغ ہلاک اور دیگر چار زخمی ہوگئے تھے۔ عہدیداروں نے قانون تعزیرات ہند کی دفعہ 144 کے تحت پانچ پولیس اسٹیشنوں خامیار ، مہاراج گنج ، نوہٹا ، صفاکدال اور ریناواڑی کے دائرہ عمل میں احتیاطی اقدام کے طورپر تحدیدات عائد کی تھیںتاکہ نظم و ضبط برقرار رکھا جاسکے ۔ دریں اثناء وادی کشمیر میں معمولات زندگی عام ہڑتال کی وجہ سے مفلوج ہوگئے ۔ اسکول اور دیگر تعلیمی ادارے بند رہے ۔ حاضری سرکاری دفتروں میں سرکاری ٹرانسپورٹ کی عدم موجودگی کی وجہ سے بہت کم دیکھی گئی ۔ جیش محمد کے دو عسکریت پسند بشمول ایک پاکستانی نژاد انکاؤنٹر میں ہلاک ہوگئے تھے جبکہ شہریوں کی بھی موت واقع ہوئی تھی ۔ دیگر 20 افراد زخمی ہوئے تھے ۔ فوج کے ساتھ احتجاجی مظاہرین کی جھڑپیں ہوئیںاور کل شوپیان میں فائرنگ بھی ہوئی تھی ۔ ایک کمسن لڑکا ہلاک اور دیگر چار بچے زخمی ہوگئے جبکہ جمو ں و کشمیر کے ضلع شوپیان میں ایک رہائشی احاطہ میں بم دھماکہ ہوا ۔ یہ دھماکہ خورشید احمد شیخ کے مکان میماندر ضلع شوپیان میں دوپہر کے وقت ہوا جس کے نتیجے میں پانچ بچے زخمی ہوگئے ۔ تمام کی عمریں چھ تا آٹھ سال تھیں۔ ایک پولیس عہدیدار کے بموجب اُنھیں فوری اسپتال منتقل کیا گیا جہاں اُن میں سے ایک سالک اقبال شیخ مردہ قرار دیا گیا ، باقی چار بچے جن میں تین لڑکے اور ایک لڑکی شامل ہے اُن کا علاج کیا جارہاہے اور اُن میں سے تین کی حالت نازک بتائی جاتی ہے ۔ ابتدائی تحقیقات سے پتہ چلتا ہے کہ یہ بچے دھماکو مادے کے ساتھ کھیل رہے تھے جبکہ یہ دھماکہ سے پھٹ پڑا ۔ ہنوز مزید تحقیقات جاری ہیں تاکہ دھماکو مادے کی نوعیت اور رہائشی علاقہ میں اس کے پہنچنے کی وجوہات معلوم کی جاسکیں۔ علحدگی پسند قائدین کسی نہ کسی وجہ سے وادی کشمیر میں وقفہ وقفہ سے ہڑتال کا اعلان کیا کرتے ہیں۔ جامع مسجد سرینگر میں تحدیدات کی وجہ سے جمعہ کی نماز بھی نہیں ہوتی ۔

TOPPOPULARRECENT