Monday , July 23 2018
Home / شہر کی خبریں / واٹر ریسورس آٹو مشین میں تبدیلی، گھر گھر پانی سربراہی کی مساعی

واٹر ریسورس آٹو مشین میں تبدیلی، گھر گھر پانی سربراہی کی مساعی

ایچ ایم ڈبلیو ایس بی، انڈیا واٹر ورکس اسوسی ایشن کا سمینار، ایم دانا کشور ایم ڈی ایچ ام ڈبلیو ایس بی کا خطاب
حیدرآباد ۔ 21 مارچ (سیاست نیوز) ایم دانا کشور (آئی اے ایس) منیجنگ ڈائرکٹر حیدرآباد میٹرو پولیٹن واٹر سپلائی سیوریج بورڈ نے کہا کہ ریاستی حکومت کا نصب العین ہے کہ عوام کو پینے کا صاف و شفاف پانی فراہم کیا جائے جس کیلئے مشن کاکتیہ اور مشن بھگیرتا کے ذریعہ ایک جامع و وسیع پروگرام ترتیب دے کر ریاست کی عوام کیلئے پانی کی ضرورت کو پورا کرنے سرگرم ہے۔ اکثر شہر کے علاقوں اور چوراہوں پر زیرزمین پینے کے پانی کے کنکشن میں خامیاں ہیں اس کو دور کیا جائے گا۔ ایم داناکشور آج حیدرآباد میٹرو پولیٹن واٹر سپلائی اینڈ سیوریج بورڈ، عثمانیہ یونیورسٹی حیدرآباد، انڈیا واٹر ورکس اسوسی ایشن کے مشترکہ تعاون سے سمینار سے خطاب کرتے ہوئے انسٹیٹیوٹ آف رینجرس (انڈیا) خیریت آباد میں یہ بات کہی۔ انہوں نے کہا کہ ریاستی حکومت جس نے اپنے 4 سال مکمل کرلئے ہیں۔ کالیشورم پراجکٹ کیلئے قومی محکمہ ماحولیات کی منظوری حاصل کی جاچکی ہے اور گھر گھرنلوں کو پہنچاتے ہوئے پینے کا پانی سربراہ کرنے چیف منسٹر کے اعلان کی عمل آوری کی جائے گی۔ انہوں نے حیدرآباد میں ان دنوں پینے کے پانی کے کنکشن میں جو خامیاں پیدا ہورہی ہیں اس کی تفصیل بھی پیش کی اور اس پر فوراً قابو پانے کے بورڈ کے عہدیداروں کو مشورہ بھی دیا اور کہا کہ شہر کی بستیوں کی رپورٹ لیں اور ان کی خامیوں کو دور کرتے ہوئے بہتر بنانے کیلئے کاموں میں سرعت پیدا کرے۔ انہوں نے کہا کہ لائن مین پانی کا وال کھولنے پر پانی سربراہ ہوا کرتا تھا مگر اب ایسا نہیں ہوگا کیونکہ اب بناء لائن مین کے شہریوں کو مل پائے گا اور واٹر ریسورس کو آٹو مشین کیا جارہا ہے۔ مسٹر ستیہ نارائنا صدرنشین آئی سی آئی ٹی ایس نے خیرمقدم کیا اور کہا کہ پانی جس کی ہر وقت ضرورت پڑتی ہے انسانی زندگی میں اس کو بڑی اہمیت حاصل ہوگئی ہے اور پانی میں کسی قسم کی خرابی پیدا ہوجائے تو مختلف بیماریاں جنم لیتی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ قومی سطح ہو یا بین الاقوامی سطح پر پینے کے پانی کے ضمن میں اور اس کی سربراہی کیلئے جو پریشانی سے عوام دوچار ہوئی وہ اب ختم ہوگی۔ انجینئر پربھاکر کنوینر آرگنائزنگ کمیٹی نے سمینار کے متعلق تفصیل سے رپورٹ پیش کی اور کہا کہ جن علاقوں میں پانی کی سربراہی نہیں ہورہی ہے موسم گرما کے پیش نظر سربراہی میں آسانی پیدا کی جائے گی۔ اس موقع پر دانا کشور کے ہاتھوں “Technical Volume” کتاب کی رسم اجرائی کی گئی۔ جناب شراون کمار نے شکریہ ادا کیا۔

TOPPOPULARRECENT