Friday , November 24 2017
Home / Top Stories / وجئے مالیا لندن فرار ، پارلیمنٹ میں اپوزیشن کا ہنگامہ

وجئے مالیا لندن فرار ، پارلیمنٹ میں اپوزیشن کا ہنگامہ

حکومت نے فرار ہونے کی اجازت دی ، کانگریس ، یو پی اے نے ہی قرض دیئے تھے : حکومت
نئی دہلی ۔ /10 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) شراب کے بڑے بیوپاری وجئے مالیا کے لندن فرار ہوجانے کے مسئلہ پر پارلیمنٹ میں آج شدید ہنگامہ ہوا ، کانگریس نے الزام عائد کیا کہ وجئے مالیا کے فرار ہونے کے پیچھے ’’مجرمانہ سازش‘‘ کی گئی ہے ۔ اس تاجر کو حکومت نے ملک سے فرار ہونے کی اجازت دی ہے ۔ حکومت نے کانگریس پر جوابی تنقید کی اور کہا کہ یو پی اے حکومت کے دور میں ہی وجئے مالیا کو قرضے جاری کئے گئے تھے وہ ہمارے لئے کوئی سنت نہیں ہیں ۔ وزیر فینانس ارون جیٹلی نے لوک سبھا میں بتایا کہ یہ واضح ہدایات دی جاچکی ہیں کہ وجئے مالیا سے اصول ہونے والی رقم 909 کروڑ کو بہرصورت وصول کیا جانا چاہئیے ۔ نومبر 2015 ء کے حساب کے مطابق ایس بی آئی کی زیرقیادت بینکوں سے قرض دیئے گئے تھے ۔ کانگریس نے الزام عائد کیا کہ وجئے مالیا  ، سی بی آئی کی لک آؤٹ نوٹس جاری کئے جانے کے باوجود ملک سے فرار ہوگئے ۔ اس پر ارون جیٹلی نے کہا کہ کسی بھی ایجنسی کو ایسا کوئی آرڈر نہیں ہے کہ وہ انہیں (وجئے مالیا کو ملک چھوڑنے سے روکا جائے) وجئے مالیا بنکوں کی جانب سے ان کا پاسپورٹ ضبط کرنے کے لئے سپریم کورٹ سے رجوع ہونے سے قبل ہی ملک سے جاچکے تھے ۔ کانگریس لیڈر ملکارجن کھرگے نے کہا کہ یہ ایک صدمہ خیز واقعہ ہے کہ یو پی گروپ کے چیرمین ایس بی آئی کو 10,000 کروڑ روپئے بقایا جات ادا کرنے ہیں ، ملک سے فرار ہوگئے ۔ راجیہ سبھا میں بھی کانگریس نے الزام عائد کیا کہ بی جے پی زیرقیادت حکومت نے وجئے مالیا کو فرار کرانے کی مجرمانہ سازش رچی تھی ۔ راہول گاندھی نے حکومت سے سوال کیا کہ آخر اس نے شراب کے بیوپاری کو ملک سے جانے کی اجازت کس طرح دی ۔ کانگریس کے نائب صدر نے حکومت پر تنقید کی اور کہا کہ پورا ملک یہ سوال کررہا ہے کہ آخر اس حکومت نے مالیا کو فرار ہونے کی اجازت کیوں دی ۔ وزیراعظم نریندر مودی سے بھی یہ سوال کیا جارہا ہے کہ آخر انہوں نے کالے دھن کو واپس کیوں نہیں لایا اور ہر شہری کے بنک اکاؤنٹ میں 15 لاکھ روپئے جمع کرانے کا وعدہ کب پورا ہوگا ۔ راہول گاندھی نے وزیراعظم پر ان کی طرز کارکردگی پر تنقید کی ۔ اس کے جواب میں ارون جیٹلی نے راہول گاندھی پر تنقید کی اور بوفورس کیس کی جانب توجہ دلاتے ہوئے کہا کہ کانگریس کے دارالحکومت میں بوفورس کیس کے ملزم اوٹوا قطروچی بھی ملک سے فرار ہوا تھا ۔ وجئے مالیہ کی فراری پر راہول گاندھی کی تنقید کا جواب دیتے ہوئے ارون جیٹلی نے کہا کہ کسی کو بھی روکنے کا ایک قانونی طریقہ ہوتا ہے یا تو آپ کے پاسپورٹ کو ضبط کرلیا جائے یا عدالت کے احکام پر عمل کیا جائے ۔ صرف ایمگریشن کے ذریعہ کسی کو ملک سے جانے کی اجازت نہیں دی جاسکتی ۔

وجئے ملیا لندن کے مضافات میں اپنی رہائش گاہ میں مقیم
لندن ۔ /10 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) شراب کے بیوپاری وجئے ملیا جن پر ہندوستانی بینکوں کو 9 ہزار کروڑ روپئے کے قرض ادا نہ کرنے کے الزامات ہیں سمجھا جاتا ہے کہ وہ لندن سے باہر اپنی رہائش گاہ میں مقیم ہیں ۔ لندن کے شمال میں تقریباً ایک گھنٹہ کی مسافت کے بعد ان کی رہائش گاہ واقع ہے ۔ یو بی گروپ کے چیرمین اور راجیہ سبھا رکن 60 سالہ وجئے ملیا پر کئی الزامات ہیں اور ان کے خلاف قانونی چارہ جوئی کی تیاری کی جارہی ہے ۔ سپریم کورٹ نے انہیں نوٹس جاری کی ہے اور کہا ہے کہ وہ ہندوستان واپس آجائیں اور یہ نوٹس لندن میں ہندوستانی ہائی کمیشن کے ذریعہ ان تک پہونچائی جائے گی۔ہندوستانی سفارتخانہ نے اب تک اس سلسلے میں کوئی بیان جاری نہیں کیا ہے ۔ ملیا نے گزشتہ ماہ ہی اشارہ دیا تھا کہ وہ لندن جائیں گے ۔

TOPPOPULARRECENT