Wednesday , September 19 2018
Home / کھیل کی خبریں / ورلڈ کپ تشدد ناقابل قبول ، برازیلی صدر ڈلما کا انتباہ

ورلڈ کپ تشدد ناقابل قبول ، برازیلی صدر ڈلما کا انتباہ

ریوڈی جنیرو۔14 مئی (سیاست ڈاٹ کام) برازیلی صدر ڈلما روسیف نے کہا ہے کہ ان کی حکومت عوامی احتجاج کے حقوق کو قبول کرتی ہے لیکن انہوں نے انتباہ دیا ہے کہ ورلڈ کپ کے دوران کسی بھی قسم کے تشدد کو برداشت نہیں کیا جائے گا۔ اب جبکہ دنیا کے سب سے بڑے فٹبال ورلڈ کپ ٹورنمنٹ میں ایک ماہ سے کم کا عرصہ باقی رہ گیا ہے، لہذا ریو کی سڑکوں پر پولیس اور ملٹری کو تعینات کردیا گیا تاکہ کسی بھی قسم کے تشدد اور احتجاج سے نمٹا جاسکے۔ ریو کی سڑکوں پر بس ڈرائیوروں نے احتجاج کرنے کے علاوہ برہم ڈرائیوروں نے 74 بسوں اور دیگر گاڑیوں کو نقصان پہونچایا ہے۔ 12 جون کو شروع ہونے والے فیفا ورلڈ کپ کے خلاف ریو میں عوامی شعبہ بشمول پولیس نے واک آؤٹ کررکھا ہے، کیونکہ عوام کا الزام ہے کہ ورلڈ کپ پر بہت زیادہ پیسہ صرف کیا گیا ہے۔گزشتہ برس کانفیڈریشن کپ بھی اسی طرح کے احتجاج اور تشدد سے متاثر رہا تھا۔ دریں اثناء برازیل کی صدر ڈلما نے کہا ہے کہ برازیلی عوام جمہوری انداز میں اپنا احتجاج کرسکتے ہیں، لیکن تشدد کو کسی بھی صورت میں برداشت نہیںکیا جائے گا۔

TOPPOPULARRECENT