Saturday , December 16 2017
Home / کھیل کی خبریں / ورلڈ کپ مقابلوں کی تقسیم ‘ بی سی آئی پرشدید تنقید

ورلڈ کپ مقابلوں کی تقسیم ‘ بی سی آئی پرشدید تنقید

ممبئی ۔18ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام ) ہندوستان میں  ٹوئنٹی20  ورلڈ کپ 2016کیلئے میدانوںکی تقسیم کے معاملے نے تنازع کی صورت اختیار کرلی جب کہ ایونٹ کے نصف تعداد کے مقابلے صرف 2میدانوں میں کرائے جانے پر بی سی سی آئی کو شدید تنقید کا سامنا ہے۔ تفصیلات کے مطابق بی سی سی آئی نے مقابلوں میں اس حد تک بندر بانٹ کی ہے کہ ایونٹ کے 35 مقابلوں  میں سے 17مقابلوں کی میزبانی بی سی سی آئی کے صدر ششانک منوہر اور سیکرٹری انوراگ ٹھاکر کے شہروں کو دی گئی ہے جب کہ دیگر پانچ شہر ممبئی، کولکتہ، بنگلور، چندی گڑھ اور دہلی صرف 18مقابلوں کی میزبانی کریں گے۔ بی سی سی آئی کے صدر ششانک منوہر کا تعلق ناگپور سے ہے جہاں 9 مقابلے جبکہ انوراگ ٹھاکر کے شہر دھرم شالا میں8 میچز ہوں گے۔ یہاں پاکستان اور ہندوستانکا میچ بھی رکھا گیا ہے جب کہ یہاں کے میدان  میں صرف 23 ہزارافراد کے بیٹھنے کی گنجائش ہے۔ اس کے برعکس  30 ہزار اور55 ہزار سے زائد افراد کی گنجائش رکھنے والے میدانوں کو ہند۔پاک جیسے اہم مقابلے کے لئے نظر انداز کردیا گیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT