Saturday , November 18 2017
Home / شہر کی خبریں / ورنگل اور کھمم کارپوریشنوں میں ٹی آر ایس کی جیت ہوگی

ورنگل اور کھمم کارپوریشنوں میں ٹی آر ایس کی جیت ہوگی

ٹی ہریش راؤ کا روڈ شو ، رائے دہندوں سے ملاقات ، عوام میں جوش و خروش
حیدرآباد۔/4مارچ، ( سیاست نیوز) ریاستی وزراء ہریش راؤ اور کے ٹی راما راؤ نے آج انتخابی مہم کے آخری دن ورنگل میونسپل کارپوریشن میں ٹی آر ایس کی مہم میں حصہ لیا۔ دونوں وزراء نے گریٹر حیدرآباد کی طرح ورنگل کارپوریشن میں شاندار کامیابی کا دعویٰ کیا ہے۔ ہریش راؤ نے مختلف علاقوں میں روڈ شو کا اہتمام کرتے ہوئے رائے دہندوں سے ملاقات کی۔ دورہ کے موقع پر عوام میں کافی جوش و خروش دیکھا گیا۔ جلسوں سے خطاب کرتے ہوئے ہریش راؤ نے کہا کہ ورنگل میں حیدرآباد کی طرح نتائج دہرائے جائیں گے۔ ورنگل جدوجہد کی تاریخ رکھتا ہے اور تلنگانہ کا مضبوط گڑھ ہے۔ ورنگل لوک سبھا کے ضمنی انتخابات میں جس طرح اپوزیشن جماعتوں کی ضمانت ضبط ہوئی تھی اسی طرح کارپوریشن کے انتخابات میں بھی عوام اپوزیشن کو سبق سکھائیں گے۔ انہوں نے 58ڈیویژنوں پر کامیابی کا دعویٰ کیا ہے۔ ہریش راؤ نے کہا کہ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ ورنگل کی ترقی کیلئے جامع منصوبہ رکھتے ہیں۔ علاقہ میں نئی یونیورسٹیز کے قیام کے علاوہ آئی ٹی کے ادارے قائم کئے گئے۔ ورنگل میں سینک اسکول اور ٹیکسٹائیل پارک قائم کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔ مشن بھگیرتا کے تحت گھر گھر پانی کا کنکشن فراہم کیا جائے گا اور ریاست بھر میں اس اسکیم پر آئندہ چار برسوں میں عمل آوری کی جائے گی۔ ورنگل میں نمس کی طرز پر سوپر اسپیشالیٹی ہاسپٹل تعمیر کیا جائے گا۔ انہوں نے بتایا کہ ویجٹبل مارکٹ کی تعمیر کیلئے 5کروڑ روپئے خرچ کئے جائیں گے۔ رکن اسمبلی کونڈہ سریکھا کی مساعی سے تین مارکٹ یارڈ تعمیر کئے جارہے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ اپریل سے ہر سفید کارڈ ہولڈر کو کلیان لکشمی اسکیم سے استفادہ کا موقع فراہم کیا جائے گا۔ ہریش راؤ نے کہا کہ ٹی آر ایس حکومت نے برقی کے بحران پر کامیابی سے قابو پالیا ہے اور شدید گرما کے باوجود شہری علاقوں میں برقی کٹوتی نافذ نہیں کی گئی۔ انہوں نے کہا کہ ورنگل کو گوداوری سے پانی سربراہ کیا جائے گا۔ ہریش راؤ نے عوام سے اپیل کی کہ وہ ٹی آر ایس امیدواروں کو بھاری اکثریت سے منتخب کریں اور ورنگل ٹاؤن کی ترقی کو یقینی بنائیں۔ اسی دوران وزیر انفارمیشن ٹکنالوجی کے ٹی راما راؤ نے مختلف وارڈز میں روڈ شو منعقد کئے۔ کے ٹی آر نے کہا کہ گریٹر ورنگل پر گلابی جھنڈا لہرانا طئے ہوچکا ہے۔ انہوں نے عوام سے ٹی آر ایس امیدواروں کو بھاری اکثریت سے کامیاب بنانے کی اپیل کی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ ورنگل کی ترقی کیلئے چیف منسٹر نے تین دن تک ورنگل میں قیام کرتے ہوئے عوامی مسائل سے واقفیت حاصل کی اور کئی پراجکٹس کو منظوری دی۔ سابق حکومتوں نے ورنگل کی ترقی کو نظرانداز کردیا تھا۔ انہوں نے بتایا کہ ورنگل کی ترقی کیلئے 1500 کروڑ روپئے خرچ کئے جائیں گے۔ کے ٹی آر نے کہا کہ ورنگل سے تعلق رکھنے والے اپوزیشن قائدین سابق میں ریاستی و مرکزی کابینہ میں شامل رہ چکے ہیں لیکن انہوں نے اپنے علاقہ کی ترقی پر کبھی بھی توجہ نہیں دی ہمیشہ وہ اپنے شخصی مفادات کی تکمیل میں مصروف رہے۔

TOPPOPULARRECENT