Saturday , November 18 2017
Home / شہر کی خبریں / ورنگل ضمنی چناؤ کو چیف منسٹر ریفرنڈم کے طور پر دیکھیں

ورنگل ضمنی چناؤ کو چیف منسٹر ریفرنڈم کے طور پر دیکھیں

کے چندر شیکھر راؤ کو کانگریس قائد محمد علی شبیر کا چیالنج
ورنگل ۔ /13 نومبر (این ایس ایس) تلنگانہ قانون ساز کونسل میں قائد اپوزیشن محمد علی شبیر نے چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ کو چیالنج کیا کہ وہ حلقہ لوک سبھا ورنگل کے ضمنی چناؤ کو ایک ریفرنڈم کے طور پر لیں اور اگر ٹی آر ایس امیدوار پی دیاکر کو اس چناؤ میں شکست ہو تو اقتدار چھوڑ دیں ۔ محمد علی شبیر وزیر آبپاشی ٹی ہریش راؤ کی جانب سے کئے گئے اس چیالنج پر اپنے ردعمل کا اظہار کررہے تھے کہ آیا صدر تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی این اتم کمار ریڈی ورنگل انتخابات میں کانگریس کے امیدوار سروے ستیہ نارائینا کو شکست ہوگئی تو ان کے عہدہ سے مستعفی ہوجائیں گے ۔ ورنگل ڈی سی سی آفس میں میڈیا کے نمائندوں سے مخاطب کرتے ہوئے محمد علی شبیر نے کہا کہ ہریش راؤ صدر ٹی پی سی سی کو چیالنج کرنے کیلئے چھوٹے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ اگر کے سی آر اس طرح کا چیالنج کریں اور ورنگل ضمنی چناؤ کو ریفرنڈم قبول کرنے کے لئے آمادہ ہوں تو ان کی پارٹی اتم کمار ریڈی کو اس چیالنج کو قبول کرنے کا مشورہ دینے پر غور کرسکتی ہے ۔ محمد علی شبیر نے گزشتہ 530 دن کے دوران ٹی آر ایس حکومت کی ناکامیوں کا تذکرہ کیا ۔ محمد علی شبیر نے اعلان کیا کہ کانگریس پارٹی وزیر پنچایت راج کے تارک راما راؤ کے خلاف کانگریس امیدوار سروے ستیہ نارائنا کو ایک پرانی کرنسی نوٹ قرار دینے اور اسے غیر مروج نوٹ کہتے ہوئے پھاڑنے پر پولیس میں شکایت درج کروائے گی ۔ انہوں نے کہا کہ ایک کرنسی نوٹ کو پھاڑنا جرم ہے اور کے ٹی آر نے عوام کے سامنے اس کا ارتکاب کیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ایک سابق مرکزی وزیر ہونے کے باوجود سروے ستیہ نارائنا نے لوک سبھا میں تلنگانہ مسئلہ پر بات کی ۔ بعد ازاں محمد علی شیبر نے سابق مرکزی وزیر ایس جے پال ریڈی کے ہمراہ شروتی کے خاندان سے ملاقات کی جو پولیس کے ساتھ ایک مبینہ انکاونٹر میں ہلاک ہوگیا ۔ انہوں نے شروتی کی ماں کو تیقن دیا کہ کانگریس اس کی سی بی آئی تحقیقات کا حکم دینے تک ریاستی حکومت کے خلاف لڑائی جاری رکھے گی ۔

TOPPOPULARRECENT