Friday , September 21 2018
Home / سیاسیات / ورون گاندھی کا سلطانپور سے پرچہ نامزدگی کا ادخال

ورون گاندھی کا سلطانپور سے پرچہ نامزدگی کا ادخال

اجازت نہ ہونے پر روڈ شو کو روک دیا گیا

اجازت نہ ہونے پر روڈ شو کو روک دیا گیا
سلطان پور( یو پی ) ۔/15اپریل، ( سیاست ڈاٹ کام ) بی جے پی جنرل سکریٹری ورون گاندھی نے سلطانپور لوک سبھا نشست کیلئے اپنے پرچہ نامزدگی کا ادخال کیا۔ جو نہرو ۔ گاندھی خاندان کا گڑھ سمجھے جانے والے رائے بریلی اور امیٹھی سے قریب تر ہے۔ ورون گاندھی نے پرچہ کے ادخال سے قبل ایک زبردست روڈ شو میں بھی حصہ لیا۔ اس موقع پر پارٹی ورکرس نے ورون گاندھی پر پھول برسائے اور باجے گاجے کے ساتھ کسی دولہا کی مانند ورون گاندھی کا جلوس آگے بڑھتا رہا۔ 34سالہ ورون گاندھی نے بالآخر ڈسٹرکٹ کلکٹریٹ کے دفتر پہنچ کر کاغذات نامزدگی کا ادخال کیا۔

یہاں اس بات کا تذکرہ دلچسپ ہوگا کہ ورون گاندھی کے قافلے کے 1.5کیلو میٹر کا راستہ طئے کرنے کے بعد شاہ گنج چوک انتظامیہ نے جلوس کو یہ کہہ کر آگے بڑھنے سے روک دیا کہ ورون گاندھی نے صرف پرچہ نامزدگی داخل کرنے کی اجازت حاصل کی ہے، روڈ شو منعقد کرنے کی نہیں جبکہ ورون گاندھی کا ارادہ تھاکہ وہ جلوس کے ساتھ 5کیلو میٹر کا فاصلہ طئے کرتے لیکن جلوس کو آگے بڑھنے کی اجازت نہ ملنے پر وہ شہر کے مرکزی علاقوں تک نہیں ہپنچ سکا۔ 2009ء کے انتخابات میں ورون گاندھی نے پیلی بھیت حلقہ انتخاب کی نمائندگی کی تھی لیکن اس بار انہوں نے سلطان پور کو اپنا حلقہ انتخاب منتخب کیا جہاں انہیں چاررُخی مقابلہ درپیش ہے جہاں سلطان پور ایم پی سنجے سنگھ کی اہلیہ امیتا سنگھ ( کانگریس )، شکیل احمد ( ایس پی ) اور پون پانڈے ( بی ایس پی) انتخابی میدان میں ہیں۔

راکھی ساونت کو بھی کامیابی کی توقع
ممبئی۔/15اپریل، ( سیاست ڈاٹ کا م ) راشٹریہ عام پارٹی کی امیدوار اوربالی ووڈ ایکٹریس راکھی ساونت نے کہا کہ ہر امیدوار کی طرح انہیں بھی پوری توقع ہے کہ عوام انہیں ان کے پہلے الیکشن میں کامیابی سے ہمکنار کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ دیگر لیڈروں کی طرح وہ لمبے چوڑے دعوے نہیں کررہی ہیں ، بس خواتین کے تحفظ کے لئے وہ انتخابی میدان میں آئی ہیں۔ اگر صرف خاتون رائے دہندو کے ووٹس انھیں مل گئے تو وہ کامیابی حاصل کرسکتی ہیں اور ایک نیا ریکارڈ بھی بناسکتی ہیں۔

TOPPOPULARRECENT