Friday , April 20 2018
Home / Top Stories / وزیراعظم لبنان سعد الحریری سعودی عرب چھوڑنے کیلئے آزاد

وزیراعظم لبنان سعد الحریری سعودی عرب چھوڑنے کیلئے آزاد

محروس رکھنے کا الزام ، سعودی وزیر خارجہ نے مسترد کردیا ، فرانس جانے کا منصوبہ
ریاض ۔ /16 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) وزیراعظم لبنان سعد الحریری جس وقت چاہے سعودی عرب چھوڑنے کیلئے آزاد ہیں ۔ حکومت سعودی عرب نے آج یہ بات کہی اور بیروت کے اس الزام کو مسترد کردیا کہ اچانک مستعفی ہونے کے بعد انہیں ریاض میں محروس رکھا گیا ہے ۔ سعد الحریری /4 نومبر کو استعفیٰ کا اعلان کرنے کے بعد سے سعودی دارالحکومت میں موجود ہیں ۔ صدر لبنان میشال عون نے جاریہ ہفتہ سعودی حکام پر وزیراعظم کو محروس رکھنے کا الزام عائد کیا تھا ۔ صدر نے آج کہا کہ حریری کا فرانس سفر کرنے کی دعوت کو قبول کرنے کا فیصلہ استعفی کی وجہ سے پیدا شدہ بحران حل کرنے کی سمت پہلا قدم ہوگا ۔ سعد الحریری کے مستقبل کے بارے میں مختلف قیاس آرائیاں کی جارہی تھیں ۔ وہ سعودی شہریت بھی رکھتے ہیں ۔ لیکن سعودی وزیر خارجہ عدیل الجبیر نے ریاض میں ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ سعد الحریری جس وقت چاہے سعودی عرب چھوڑنے کیلئے آزاد ہیں ۔ صدر لبنان نے سعد الحریری کا بیرونی ملک سے استعفیٰ قبول کرنے سے انکار کیا ہے ۔ اس دوران فرانس کے وزیر خارجہ جین ۔ یوئس لی ڈرین نے جو ریاض کے دورہ پر ہیں آج سعد الحریری سے ملاقات کی اور انہیں فرانس کا دورہ کرتے ہوئے صدر ایمویل میکرون سے ملاقات کی دعوت دی ۔ وزیر خارجہ فرانس نے سعودی ولیعہد محمد بن سلمان سے بھی ملاقات کی اور بعد ازاں ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ سعد الحریری فرانس جائیں گے اور ولیعہد کو اس بارے میں مطلع کیا جاچکا ہے ۔ جب ان سے پوچھا گیا کہ صدر فرانس سے ملاقات کب ہوگی تو انہوں نے جواب دیا کہ اس معاملے میں فیصلہ حریری کے دورہ فرانس کے مطابق کیا جائے گا ۔

TOPPOPULARRECENT