Saturday , December 16 2017
Home / ہندوستان / وزیراعظم مودی کیخلاف ’فتویٰ‘ ، کولکاتا کے امام کو گرفتار کرنے بی جے پی کا مطالبہ

وزیراعظم مودی کیخلاف ’فتویٰ‘ ، کولکاتا کے امام کو گرفتار کرنے بی جے پی کا مطالبہ

کولکاتا ؍ نئی دہلی ، 7 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) کولکاتا کی ایک مسجد کے امام نے آج وزیراعظم نریندر مودی کے خلاف ’فتویٰ‘ جاری کرتے ہوئے انھیں نوٹ بندی کے ذریعے عوام کو ’’بے وقوف‘‘ بنانے کا مورد الزام ٹھہرایا، جس پر بی جے پی نے شدید ردعمل میں اُن کی گرفتاری کا مطالبہ کیا ہے۔ کولکاتا کی ٹیپو سلطان مسجد کے شاہی امام سید محمد نور الرحمن برکتی نے کہا کہ ہر دن عوام کو ہراساں کیا جارہا ہے اور وہ نوٹ بندی کے سبب مسئلے سے دوچار ہیں۔ شاہی امام نے آل انڈیا مجلس شوریٰ اور آل انڈیا مینارٹی فورم کی یہاں جوائنٹ کانفرنس کے دوران کہا کہ مودی نوٹ بندی کے ذریعے اس ملک کے سماج اور بھولے بھالے لوگوں کو بے وقوف بنارہے ہیں اور کوئی نہیں چاہتا کہ وہ وزیراعظم کی حیثیت سے برقرار رہیں۔ بی جے پی نیشنل سکریٹری سدھارتھ ناتھ سنگھ نے جو پارٹی کے مغربی بنگال امور کے انچارج ہیں، اس ’فتویٰ‘ کی مذمت کی اور ممتا بنرجی سے شاہی امام کی گرفتاری کا مطالبہ کیا۔

TOPPOPULARRECENT