Saturday , June 23 2018
Home / دنیا / وزیراعظم مودی کی امریکہ میں زائد از 50 تقاریب میں شرکت

وزیراعظم مودی کی امریکہ میں زائد از 50 تقاریب میں شرکت

نئی دہلی ؍ واشنگٹن ۔ 23 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) ہندوستان وزیراعظم نریندر مودی کے 26 ستمبر کو شروع ہونے والے نامی گرامی دورہ امریکہ سے ’’قابل لحاظ‘‘ نتیجہ کی توقع کررہا ہے، جس کے دوران وہ لگ بھگ 50 مصروفیات میں شریک ہوں گے جن میں صدر براک اوباما کے ساتھ باہمی میٹنگ اور یو این جنرل اسمبلی میں تقریر شامل ہے۔ اس دورہ کے بارے میں میڈیا والوں

نئی دہلی ؍ واشنگٹن ۔ 23 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) ہندوستان وزیراعظم نریندر مودی کے 26 ستمبر کو شروع ہونے والے نامی گرامی دورہ امریکہ سے ’’قابل لحاظ‘‘ نتیجہ کی توقع کررہا ہے، جس کے دوران وہ لگ بھگ 50 مصروفیات میں شریک ہوں گے جن میں صدر براک اوباما کے ساتھ باہمی میٹنگ اور یو این جنرل اسمبلی میں تقریر شامل ہے۔ اس دورہ کے بارے میں میڈیا والوں کو واقف کراتے ہوئے وزارت امورخارجہ ترجمان سید اکبر الدین نے نئی دہلی میں یہ واضح بھی کردیا کہ وزیراعظم کسی رشتہ میں ’’آگے کی سمت نہ کہ پیچھے دیکھتے‘‘ ہیں، جب 2002ء کے گجرات فسادات کے بعد امریکہ کی جانب سے مودی کے بائیکاٹ کے تعلق سے استفسار کیا گیا۔ انہوںنے کہا، ’’ہم وزیراعظم نریندر مودی کے اولین دورہ نیویارک

اور واشنگٹن کو ہندوستان کے پابند عہد عزم کے طور پر دیکھتے ہیں کہ ہند ۔ امریکہ روابط میں مختلف شعبوں یں بڑھتے اشتراک کے ساتھ طاقتور باہمی رشتہ استوار کیا جائے اور یہ دیکھا جائے کہ ہم کن شعبوں میں مل کر کام کرسکتے ہیں اور کہاں ہم ایک دوسرے کی مدد کرسکتے ہیں‘‘۔ مودی کے دورہ امریکہ میں کئی یادداشت مفاہمت پر دستخط بھی متوقع ہے۔ وہ اس مصروف ترین دورے میں 100 گھنٹوں کے قیام کے موقع پر کئی عالمی قائدین سے ملاقات کریں گے۔ وہ ہزاروں شخصیتوں کے اجتماع سے خطاب اور اقوام متحدہ جنرل اسمبلی کے اجلاس سے مخاطبت کے علاوہ 500 سی ای اوز سے تبادلہ خیال کریں گے۔ اس دورہ میں وزیراعظم مودی اپنی حکومت کی وسیع تر پالیسی کا اعلان کریں گے اور بیرونی سی ای اوز کو ہندوستان میں سرمایہ کاری کے لئے مدعو کریں گے۔

TOPPOPULARRECENT