Tuesday , July 17 2018
Home / شہر کی خبریں / وزیراعظم مودی کی عمداً خاموشی ، اے پی کے ساتھ انصاف رسانی کا مطالبہ نظر انداز

وزیراعظم مودی کی عمداً خاموشی ، اے پی کے ساتھ انصاف رسانی کا مطالبہ نظر انداز

منصوبہ بند طریقہ سے ٹی آر ایس و ڈی ایم کے کے ساتھ خفیہ ساز باز ، تلگو دیشم ارکان پارلیمان کا بیان
حیدرآباد ۔ 21 ۔ مارچ : ( سیاست نیوز ) : تلگو دیشم پارٹی کے ارکان پارلیمان نے وزیراعظم نریندر مودی کے خلاف سنسنی خیز ریمارکس کیے اور کہا کہ ریاست آندھرا پردیش کے ساتھ مکمل انصاف کرنے کا پارلیمنٹ میں گذشتہ کئی دنوں سے احتجاج و جدوجہد کرنے کے باوجود وزیراعظم عمداً اپنے کوئی ردعمل کا اظہار نہیں کررہے ہیں جب کہ پارلیمنٹ میں جاری طویل ہنگامہ آرائی و احتجاجی مظاہروں کے باوجود ایسا محسوس ہورہا ہے کہ وزیراعظم نریندر مودی کو پارلیمنٹ میں جاری ہنگامہ آرائی نہ ہی دکھائی دے رہی ہے اور نہ ہی انہیں سنائی دے رہی ہے ۔ اس طرح تلگو دیشم پارٹی نے اپنے ساتھ یعنی ریاست آندھرا پردیش کے ساتھ وزیراعظم نریندر مودی سے دغا بازی و غداری کی توقع نہیں رکھی تھی بلکہ ہمیشہ تلگو دیشم پارٹی نے بی جے پی کے ساتھ اور نریندر مودی کے ساتھ بہت دوستانہ تعلقات برقرار رکھے ۔ تلگو دیشم پارٹی ارکان پارلیمان نے آج دہلی میں اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ تلگو ریاست آندھرا پردیش کے عوام سے کی گئیں نا انصافیوں پر ملک کے ہر گوشہ کی نظریں لگی ہوئی ہیں اور موقع کا انتظار کیا جارہا ہے ۔ ارکان پارلیمان تلگو دیشم پارٹی نے کہا کہ گذشتہ عرصہ کے دوران کانگریس پارٹی نے جو غلطی کی تھی آج وہی غلطی بی جے پی حکومت کررہی ہے ۔ ان غلطیوں اور نا انصافیوں کے خلاف ہی تلگو دیشم پارٹی نے مرکزی حکومت کے خلاف تحریک عدم اعتماد پیش کیا لیکن اس تحریک عدم اعتماد پر پارلیمنٹ میں مباحث کو ٹالنے کے لیے ہی ایک منصوبہ بند سازش اور مرکزی حکومت کے ساتھ خفیہ سازباز کے ذریعہ تلنگانہ راشٹرا سمیتی اور ڈی ایم کے ارکان پارلیمان لوک سبھا میں احتجاج ہنگامہ آرائی جاری رکھے ہوئے ہیں اور اسپیکر لوک سبھا حکومت کی ایماء پر پارلیمانی کارروائی کو جاری رکھنے کے بجائے اندرون چند منٹوں میں پارلیمانی کارروائی کو دوسرے دن کے لیے ملتوی کردینے کا اعلان کررہی ہیں ۔ ارکان پارلیمان تلگو دیشم پارٹی نے کہا کہ اگر لوک سبھا میں مباحث کا آغاز ہونے پر ان دونوں ٹی ار ایس اور ڈی ایم کے ارکان پارلیمان کو درپیش مسائل پر مباحث کئے جاسکتے ہیں ۔ لیکن ایسے کوئی اہمیت کے حامل مسائل ہرگز نہیں ہیں بلکہ خفیہ ساز باز کے ذریعہ ہی ٹی آر ایس اور ڈی ایم کے پارٹیاں پارلیمانی کارروائی میں رکاوٹیں پیدا کررہی ہیں ۔ ارکان پارلیمان تلگو دیشم پارٹی نے وزیراعظم کو سخت تنقید کا نشانہ بنایا اور کہا کہ ریاست آندھرا پردیش کی راجدھانی کی تعمیر کے لیے مرکزی حکومت کی جانب سے فراہم کردہ رقومات راجدھانی کی حصار بندی کے ( باونڈری وال کے ) تعمیری کاموں کے لیے بھی کافی نہیں ہوں گی ۔۔

TOPPOPULARRECENT