Monday , June 25 2018
Home / Top Stories / وزیراعظم نریندر مودی سہ قومی دورہ پر روانہ

وزیراعظم نریندر مودی سہ قومی دورہ پر روانہ

نئی دہلی۔ 9 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) سرمایہ کاری اور ٹیکنالوجی پر اپنی توجہ مرکوز کرنے کے ساتھ وزیراعظم نریندر مودی آج سہ قومی بیرونی دورۂ فرانس، جرمنی اور کینیڈا کیلئے روانہ ہوئے۔ اس دورہ کے دوران سیول نیوکلیئر اور ڈیفنس کے بشمول مختلف مسائل پر بات چیت ہوگی۔ ان کے 9 روزہ دورہ کی پہلی منزل فرانس ہوگی۔ پیرس میں اپنے قیام کے دوران عبوری

نئی دہلی۔ 9 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) سرمایہ کاری اور ٹیکنالوجی پر اپنی توجہ مرکوز کرنے کے ساتھ وزیراعظم نریندر مودی آج سہ قومی بیرونی دورۂ فرانس، جرمنی اور کینیڈا کیلئے روانہ ہوئے۔ اس دورہ کے دوران سیول نیوکلیئر اور ڈیفنس کے بشمول مختلف مسائل پر بات چیت ہوگی۔ ان کے 9 روزہ دورہ کی پہلی منزل فرانس ہوگی۔ پیرس میں اپنے قیام کے دوران عبوری صدر فرانس فرانسیس ہولینڈ اور بزنس لینڈیس سے ملاقات اور بات چیت کریں گے۔ ان کی بات چیت میں سیول نیوکلیئر ڈیفنس اور تجارت اہم موضوع ہوں گے۔ فرانس میں چار روزہ قیام کی خصوصیات کو واضح کرتے ہوئے کہا گیا ہے کہ نریندر مودی اور ہولینڈ ایک کشتی کی سواری کریں گے جس کو ’’ناؤ پہ چرچہ‘‘ نام دیا گیا ہے۔ قبل ازیں مودی نے چائے پر چرچہ کرتے ہوئے صدر براک اوباما کے جنوری میں دورۂ ہند کے موقع پر بات چیت کی تھی، دیگر بیرونی قائدین سے بھی چائے پہ چرچہ ہوئی تھی۔ اب فرانس میں کشتی پر چرچہ ہوگی۔ فرانس میں وزیراعظم عالمی جنگ اول کی یادگار پر پہنچ کر 10 ہزار ہندوستانیوں کو خراج پیش کریں گے جنہوں نے فرانس کے ساتھ لڑتے ہوئے اپنی جانیں قربان کی تھیں۔

وہ یونیسکو ہیڈکوارٹرس کا بھی دورہ کریں گے۔ ایربس کی سہولت اور فرانس خلائی ایجنسی کے دفتر کا بھی دورہ کریں گے۔ ہندوستان نے توقع ظاہر کی کہ فرانس کی کمپنیاں مودی کی جانب سے شروع کردہ ’’میک اِن انڈیا‘‘ پروگرام میں حصہ لیں گی۔ فرانس سے وزیراعظم مودی، جرمنی کا سفر کریں گے۔ جہاں وہ پھر ایک بار بزنس اور ٹیکنالوجی پر بات چیت کریں گے اور میک اِن انڈیا میں حصہ لینے کیلئے بزنس کمیونٹی سے بات چیت کریں گے۔ وہ میلے امیک نمائش کا بھی دورہ کریں گے، جہاں اس سال ہندوستان حلیف ملک کی حیثیت سے شریک ہے۔ اس میں تقریباً 400 ہندوستانی کمپنیاں حصہ لے رہی ہیں۔ اس فیر میں ہندوستانی سی ای اوز کی 100 تا 120 تعداد حصہ لے گی اور تقریباً 3,000 جرمن مندوبین بھی شرکت کریں گے۔ نریندر مودی جرمن چانسلر انجیلا میرکل کے ساتھ اس نمائش میں ہندوستانی پویلین کا افتتاح کریں گے۔ یہاں ہند۔ جرمن بزنس چوٹی کانفرنس سے خطاب کریں گے۔ وہ یہاں مہاتما گاندھی کے مجسمہ کی بھی نقاب کشائی انجام دیں گے۔

دونوں قائدین برلن میں تفصیلی بات چیت کریں گے۔ ان کی بات چیت کا اصل موضوع ہندوستان کے ساتھ جرمنی کس طرح کام کرے گا اور اس کے ترقیاتی ایجنڈہ کو کس طرح انجام دیا جاسکتا ہے، ہوگا۔ وزیراعظم مودی برلن کے ریلوے اسٹیشن کا بھی دورہ کریں گے جہاں ان کی حکومت ریلویز کو عصری بنانے کا ایجنڈہ رکھتی ہے۔ وہ اپنے دورہ کے تیسرے اور آخری مرحلے میں کینیڈا جائیں گے۔ گزشتہ 42 سال میں وہ پہلے ہندوستانی وزیراعظم ہوں گے، جو کینیڈا کا دورہ کریں گے۔ ماضی میں آخری دورہ 1973ء میں ہوا تھا۔ نریندر مودی یہاں وزیراعظم کینیڈا اسٹیفن ہارپر سے وسیع تر مسائل پر بات چیت کریں گے۔ اس میں نیوکلیئر توانائی، تجارت اور سرمایہ کاری پر بھی تبادلہ خیال ہوگا۔ ہندوستان کو کینیڈا کے ساتھ اہم شعبوں میں شراکت داری سے دلچسپی ہے۔ وہ اپنے ترقیاتی منصوبوں کو پورا کرنے کی کوشش کرے گا۔ مودی کے اس دورہ سے باہمی تعلقات میں نئے باب کا آغاز ہوگا۔ نریندر مودی کینیڈا کے میڈیسن اسکوائر لائک میں ہندوستانی برادری سے بھی خطاب کریں گے۔ وہ ٹورنٹو میں ایرانڈیا طیارہ حادثہ کے مہلوکین کی یادگار پر بھی جائیں گے اور لکشمی نارائن مندر کا بھی دورہ کریں گے۔

TOPPOPULARRECENT