Saturday , December 16 2017
Home / Top Stories / وزیراعظم نے اپنی ڈگری کے بارے میں عوام کو دھوکہ دیا

وزیراعظم نے اپنی ڈگری کے بارے میں عوام کو دھوکہ دیا

مودی نے ملک سے جھوٹ بولا، جھوٹا حلفنامہ دیا، پھر جعلی ڈگری سامنے لائی : کجریوال
نئی دہلی ، 6 مئی (سیاست ڈاٹ کام) وزیراعظم نریندر مودی کی BA ڈگری کے بارے میں تنازعہ کو نیا موڑ دیتے ہوئے عام آدمی پارٹی نے آج الزام عائد کیا کہ اُن کے ہم نام والے کی حاصل کردہ ڈگری کو خود اُن کی ڈگری کے طور پر پیش کیا گیا، جسے اروند کجریوال نے صریح ’’دھوکہ دہی‘‘ کے مترادف قرار دیا۔ کجریوال نے پریس کانفرنس کو بتایا کہ وہ ’’پوری ذمہ داری‘‘ سے ادعا کرسکتے ہیں کہ دہلی یونیورسٹی کے ریکارڈز میں ’’نریندر دامودر داس مودی‘‘ کا کوئی حوالہ نہیں اور یہ کہ ایک شخص بنام ’’نریندر کمار مہاویر پرساد مودی‘‘ نے 1975ء میں داخلہ لیا تھا۔ چیف منسٹر دہلی نے جو مودی کی ڈگریوں کو منظرعام پر لانے کا مطالبہ کرتے آئے ہیں، کہا کہ مسئلہ یہ نہیں کہ آیا پی ایم ’’10 ویں یا 12 ویں کامیاب‘‘ ہیں بلکہ یہ ہے کہ انھوں نے ’’جعلی‘‘ اسناد پیش کرتے ہوئے اس ملک کے عوام کو ’’دھوکہ‘‘ دیا ہے۔ کجریوال نے کہا کہ آپ کو پی ایم بننے کیلئے کوئی ڈگری درکار نہیں ہوتی۔ ٹیلنٹ ضروری نہیں کہ باقاعدہ تعلیم کا نتیجہ ہو۔ کم باقاعدہ تعلیم والا شخص بھی نہایت باصلاحیت ہوسکتا ہے، انا ہزارے کی مثال لیجئے۔ ’’اول، انھوں نے ملک کے سامنے جھوٹ بولا۔ دوم، اپنے حلفنامہ میں جھوٹ لکھا ۔ اور سوم، جو ڈگری سامنے آئی وہ جعلی ہے۔ یہ تو دھوکہ دہی کا معاملہ ہے۔ اگر پی ایم جیسے شخص کے خلاف دھوکہ دہی کے الزامات ہوں تو پھر یہ سنگین معاملہ ہے۔‘‘

TOPPOPULARRECENT