Monday , December 18 2017
Home / Top Stories / وزیراعظم نے ’مدبر‘ کی طرح عمل کیا: سشما سوراج

وزیراعظم نے ’مدبر‘ کی طرح عمل کیا: سشما سوراج

مودی نے پروٹوکول سے بندھے رواج کو توڑ دیا، پاکستان میں توقف پر بی جے پی کا ردعمل
نئی دہلی 25 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) وزیر اُمور خارجہ سشما سوراج نے آج کہاکہ وزیراعظم نریندر مودی نے دورۂ پاکستان کا فیصلہ کرتے ہوئے ایک مدبر کی طرح عمل کیا ہے اور پڑوسیوں کے ساتھ تعلقات اِسی طرح کے ہونے چاہئیں۔ سشما نے وزیراعظم مودی کے اپنے پاکستانی ہم منصب نواز شریف سے ملاقات کے لئے لاہور کے دورہ کی خبر پر ٹوئٹر کے ذریعہ اپنے ردعمل میں کہاکہ یہ تو ایک مدبر کا اقدام ہے۔ ’’پڑوسی سے ایسے ہی رشتے ہونے چاہئیں۔‘‘ مودی نے آج اپنے مختصر دورہ افغانستان کے اختتام پر واپسی کے دوران لاہور میں توقف کا حیران کن اعلان کیا۔ اُنھوں نے ٹوئٹ کیاکہ لاہور میں آج دوپہر وزیراعظم نواز شریف سے ملاقات کا منتظر ہوں، جہاں میں دہلی کو میری واپسی کے راستے توقف کروں گا۔ قبل ازیں مودی نے نواز شریف کو اُن کی سالگرہ پر مبارکباد پیش کی تھی۔ اس دوران وزیراعظم مودی کے دورۂ لاہور کے فیصلہ کو روایت شکن قرار دے کر اس کی ستائش کرتے ہوئے بی جے پی نے کہاکہ اٹل بہاری واجپائی کی سالگرہ کے دن اس سے بہتر کچھ بھی نہیں ہوسکتا تھا۔ بی جے پی جنرل سکریٹری رام مادھو نے کہاکہ پروٹوکول سے بندھے اور جکڑے سیاسی روابط سے انحراف کرتے ہوئے وزیراعظم مودی نے ہندوستان اور پاکستان کے درمیان تعلقات کو نئی جہت دینے کی کوشش کی ہے۔ اُنھوں نے کہاکہ نوں پڑوسیوں کو اپنے تعلقات میں تکلف برطرف کرنے کی ضرورت ہے۔ جیسا کہ یوروپی یونین اور آسیان کی طرح دنیا کے کئی مقامات پر دیکھنے میں آرہا ہے۔ ’’پی ایم مودی کا وزیراعظم پاکستان نواز شریف کو مبارکباد دینے کے لئے لاہور میں یکا یک توقف کرنا دونوں ملکوں کے درمیان پروٹوکول سے جکڑی سیاست کے شکنجے کو توڑنے کے لئے اشد ضروری اقدام تھا۔ دنیا میں مثلاً یوروپی یونین، آسیان اور ہندوستان و پاکستان کے پڑوسی قائدین نے تک اِسی طرح کے اقدامات کے ذریعہ اپنے پڑوسیوں کے ساتھ روابط کو بہتر بنایا ہے۔

TOPPOPULARRECENT