Thursday , September 20 2018
Home / پاکستان / وزیراعظم پاکستان کو طالبان سے نمٹنے فوج کی تجاویز

وزیراعظم پاکستان کو طالبان سے نمٹنے فوج کی تجاویز

نواز ۔فوج اختلافات کے اشارے ، وزیراعظم کا فیصلہ قومی سلامتی کمیٹی اجلاس کے بعد

نواز ۔فوج اختلافات کے اشارے ، وزیراعظم کا فیصلہ قومی سلامتی کمیٹی اجلاس کے بعد
اسلام آباد۔ 11 جون (سیاست ڈاٹ کام) فوج اور قومی صیانتی مشیر برائے وزیراعظم پاکستان نواز شریف نے دہشت گردی کو آہنی پنجہ سے کچلنے کے ’’کئی متبادل طریقے‘‘ پیش کئے ہیں۔ کراچی ایرپورٹ پر طالبان کے دلیرانہ حملے کے بعد یہ متبادل طریقے پیش کئے گئے ہیں۔ حملے میں مبینہ طور پر ازبیک جنگجو بھی شامل تھے۔ نواز شریف نے کل اعلیٰ سطح کے اجلاس کی صدارت کی تھی جس میں قومی سلامتی ٹیم کے نمائندوں نے شرکت کی۔ روزنامہ ’’ڈان‘‘ نے کہا کہ ایک ذریعہ کا دعویٰ ہے کہ فوج نے طالبان کے حملے کا سخت جواب دینے کا مطالبہ کیا ہے۔

فوج نے وزیراعظم کے خلاف بھی مقدمہ تیار کرتے ہوئے کہا کہ تحریک ِطالبان پاکستان نے دوبارہ اہم مقامات پر حملوں کی ذمہ داری قبول کرنا شروع کردی ہے جو فوج کے خیال میں حدود سے تجاوز ہے۔ سرکاری عہدیدار یہ کہنے کیلئے تیار نہیں تھے کہ حکومت فوج کے مطالبہ سے مزید جوابی حملوں کی تجویز سے متفق ہوچکی ہے یا نہیں۔ وزیراعظم کئی متبادل طریقوں پر غور کررہے ہیں اور قطعی فیصلہ صیانتی کمیٹی میٹنگ کے بعد کیا جائے گا جو امکان ہے کہ جاریہ ہفتے کے اواخر یا آئندہ ہفتے منعقد کیا جائے گا۔ دفتر وزیراعظم نے مختصر بیان میں کہا کہ داخلی اور علاقائی سلامتی بشمول مرکز زیرانتظام قبائیلی علاقہ، کراچی اور بلوچستان پر اجلاس میں تبادلہ خیال کیا گیا۔ اجلاس میں وزیر داخلہ چودھری نثار علی خاں، سربراہ فوج جنرل راحیل شریف، چیف آف جنرل اسٹاف لیفٹننٹ جنرل اشفاق ندیم احمد اور صدر کاؤنٹر انٹلیجنس آئی ایس آئی میجر جنرل ناصر دلاور شاہ نے شرکت کی۔

TOPPOPULARRECENT