Friday , September 21 2018
Home / Top Stories / وزیراعظم کا اپوزیشن سے ربط،سرمائی اجلاس ثمر آور ہونے کی توقع

وزیراعظم کا اپوزیشن سے ربط،سرمائی اجلاس ثمر آور ہونے کی توقع

نئی دہلی ۔ 24 ۔ نومبر (سیاست ڈاٹ کام) وزیراعظم نریندر مودی نے آج امید ظاہر کی کہ اپوزیشن پارلیمنٹ میں تعاون کرے گا تاکہ سرمائی اجلاس ’’ثمر آور اور نتیجہ خیز‘‘ ثابت ہوگا۔ حالانکہ کئی سیاسی پارٹیوں نے واضح کردیا ہے کہ وہ اصلاحی اقدامات کی مزاحمت کریں گی۔ ایوان پارلیمنٹ کے باہر سرمائی اجلاس کے پہلے دن پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے م

نئی دہلی ۔ 24 ۔ نومبر (سیاست ڈاٹ کام) وزیراعظم نریندر مودی نے آج امید ظاہر کی کہ اپوزیشن پارلیمنٹ میں تعاون کرے گا تاکہ سرمائی اجلاس ’’ثمر آور اور نتیجہ خیز‘‘ ثابت ہوگا۔ حالانکہ کئی سیاسی پارٹیوں نے واضح کردیا ہے کہ وہ اصلاحی اقدامات کی مزاحمت کریں گی۔ ایوان پارلیمنٹ کے باہر سرمائی اجلاس کے پہلے دن پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے مودی نے کہا کہ ملک کے عوام نے ہمیں حکومت چلانے کی ذمہ داری دی ہے لیکن ان تمام افراد کو جو یہاں پارلیمنٹ میں بیٹھے ہوئے ہیں، ملک کو چلانے کی ذمہ داری دی ہے۔ اپوزیشن کے بجٹ اجلاس کے دوران ’’مثبت کردار‘‘ کی ستائش کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ایسا ہی تعاون ارکان پارلیمنٹ سے اس بار بھی متوقع ہے۔ انہوں نے اعتماد ظاہر کیا ہے کہ عوام کی بہتری کیلئے ٹھنڈے دماغ اور خوشگوار ماحول میں بہت سا اچھا کام کیا جائے گا ۔ نریندر مودی نے کہا کہ انہیں یقین ہے کہ جو لوگ حکومت چلا رہے ہیں اور ملک چلانے کی ذمہ داری رکھتے ہیں، ملک کی ترقی کیلئے متحد ہوکر کام کریں گے۔ سرمائی اجلاس ثمر آور اور نتیجہ خیز ثابت ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ اجلاس میں اپوزیشن کے مثبت کردار کی وجہ سے کافی اچھا کام ہوا۔ انہیں امید ہے کہ اس بار بھی ایسا ہی تجربہ حاصل ہوگا ۔ ان کا بیان کئی اپوزیشن پارٹیوں کی جانب سے انشورنس بل کی مخالفت اور کالا دھن مسئلہ پر حکومت پر تنقید اور اسپکٹرم کا مسئلہ اٹھانے کے فیصلہ کی وجہ سے سرمائی اجلاس طوفانی ثابت ہوگا۔ مودی نے اجلاس سے قبل کل جماعتی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کل تیقن دیا تھا کہ اجتماعی طورپر اہم تمام مسائل پر تبادلہ خیال کیا جائے گا اور امید ظاہر کی تھی کہ ایک ماہ طویل اجلاس گزشتہ بجٹ اجلاس کی کریں ’’بہت اچھا‘‘ ثابت ہوگا۔ بائیں بازو کی پارٹیاں ، ترنمول کانگریس ، جے ڈی یو، آر جے ڈی ، سماج وادی پارٹی اور بی ایس پی نے فیصلہ کیا ہے کہ انشورنس بل کی متحدہ مخالفت کی جائے گی اور کانگریس سے خواہش کی ہے کہ اپوزیشن کے وسیع تر اتحاد کی خاطر ان کی تائید کی جائے۔ لوک سبھا میں کانگریس کے قائد ملک ارجن کھرگے نے اپوزیشن کی تائید کا واضح اشارہ دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ کافی پہلے یہ دیکھے گی کہ انشورنس بل میں حکومت کیا تبدیلیاں کرنا چاہتی ہے۔ پارلیمنٹ اجلاس آج تین موجودہ ارکان بشمول سابق مرکزی وزیر مرلی دیورا کے انتقال پر انہیں خراج عقیدت پیش کرنے کے بعد دن بھر کیلئے ملتوی کردیا گیا ۔ راجیہ سبھا کا اجلاس شروع ہوتے ہی صدرنشین حامد انصاری نے ممبئی میں 77 سالہ مرلی دیورا کے انتقال کی خبر بھی لوک سبھا میں ارکان نے موجودہ ارکان ہیمندر چندر سنگھ (بی جے ڈی) اور کپل کرشنا ٹھاکر (ترنمول کانگریس) کو خراج عقیدت پیش کیا۔ امیتاب نندی ، ایم ایس سنجیوی راؤ ، اویدیاناتھ، سیف الدین چودھری اور سنجے سنگھ چوہان کو جو ایوان کے سابق ارکان ہیں، خراج عقیدت پیش کیا گیا۔ پانچ میں سے تین ارکان ضمنی انتخابات میں منتخب ہوچکے تھے، انہوں نے حلف بھی لے لیا تھا، وڈودرا کے بی جے پی رکن رنجن بین بھٹ ، بی جے پی کے پریتم گوپی ناتھ منڈے اور سماج وادی پارٹی کے تیج پرتاپ نے بھی حلف لیا تھا۔

TOPPOPULARRECENT