Sunday , November 18 2018
Home / Top Stories / وزیراعظم کو آر بی آئی سے 36 لاکھ کروڑ درکار

وزیراعظم کو آر بی آئی سے 36 لاکھ کروڑ درکار

مودی ذہین منطق سے بحران حل کرنا کے خواہاں: راہول

نئی دہلی 6 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) کانگریس کے صدر راہول گاندھی نے حکومت کی طرف سے ریزرو بینک آف انڈیا (آر بی آئی) سے 3.6 لاکھ کروڑ روپئے کے حصول کی کوشش سے متعلق میڈیا رپورٹس پر آج وزیراعظم نریندر مودی کو اپنی تنقید کا نشانہ بنایا اور الزام عائد کیاکہ اُنھیں (وزیراعظم مودی کو) ’اپنی ذہین‘ قابل و باصلاحیت معاشی منطقوںسے پیدا شدہ بحران سے نمٹنے کے لئے اس رقم کی ضرورت ہے۔ راہول گاندھی نے آر بی آئی کے گورنر اریجیت پٹیل پر زور دیا کہ وہ مودی کی مدد کے لئے کھڑے ہوں اور ملک کو بچائیں۔ تاہم حکومت یا حکمراں جماعت نے راہول گاندھی کی طرف سے عائد کردہ اس الزام پر کسی فوری ردعمل کا اظہار نہیں کیا۔ راہول گاندھی نے اس خبر سے متعلق میڈیا رپورٹ کے ساتھ ٹوئیٹ کیاکہ 36 لاکھ کروڑروپئے۔ یہ رقم ہے جس کی وزیراعظم کو آر بی آئی سے لینے کی ضرورت ہے تاکہ اس کے ذریعہ وہ اُس بحران کو حل کرسکیں جو اُن کی ذہین و باصلاحیت منطقوں سے پیدا ہوا ہے۔ ان (مودی) کی مدد کے لئے اُٹھ کھڑے ہوں اور ملک کو بچائیں‘‘۔ اس میڈیا رپورٹ میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ آر بی آئی اور حکومت کے درمیان تنازعہ کی بنیادی وجہ وزارت فینانس کی یہ تجویز ہے کہ 3.6 لاکھ کروڑ کے منجملہ فاضل رقم اُس (وزارت فینانس) کو دیدی جائے جو مجموعی طور پر 9.59 لاکھ کروڑ روپئے کا ایک تہائی حصہ ہے۔
راہول گاندھی نے حکومت پر الزام عائد کیاکہ وہ اپنے زور بازو کے ذریعہ اعلیٰ سرکاری اداروں کو تباہ کررہی ہے۔ مودی حکومت اور آر بی آئی کے درمیان اختلافات اُس وقت منظر عام پر آگئے تھے جب گورنر اریجیت پٹیل نے ملک کی سب سے بڑی بینک کی خود اختیاری پر تشویش کا اظہار کیا تھا اور خبردار کیا تھا کہ اس مرکزی بینک کی آزادی کا احترام نہ کئے جانے کی صورت میں جلد یا بہ دیر مالیاتی مارکٹوں کے عتاب کا سامنا کرنا ہوگا۔

TOPPOPULARRECENT