Thursday , January 18 2018
Home / ہندوستان / وزیر فینانس سے مزید فنڈس کیلئے رابطہ پیدا کرنے مرکزی وزیر برائے فلاح خواتین و اطفال مینکا گاندھی کا تیقن

وزیر فینانس سے مزید فنڈس کیلئے رابطہ پیدا کرنے مرکزی وزیر برائے فلاح خواتین و اطفال مینکا گاندھی کا تیقن

نئی دہلی 20 مارچ(سیاست ڈاٹ کام ) 2015-16 کیلئے مختص کئے ہوئے فنڈس میں تخفیف کے بعد وزارت بہبود خواتین و اطفال اور وزارت صحت عنقریب وزارت فینانس سے ربط پیدا کر کے ان کے سالانہ بجٹ میں اضافہ کی خواہش کریں گے ۔مرکزی وزیر برائے بہبود و خواتین اطفال مینکا گاندھی نے لوک سبھا میںکہا کہ بجٹ میں متحدہ بہبود اطفال خدمات اور 2015-16 کے بجٹ میں ان کی وزا

نئی دہلی 20 مارچ(سیاست ڈاٹ کام ) 2015-16 کیلئے مختص کئے ہوئے فنڈس میں تخفیف کے بعد وزارت بہبود خواتین و اطفال اور وزارت صحت عنقریب وزارت فینانس سے ربط پیدا کر کے ان کے سالانہ بجٹ میں اضافہ کی خواہش کریں گے ۔مرکزی وزیر برائے بہبود و خواتین اطفال مینکا گاندھی نے لوک سبھا میںکہا کہ بجٹ میں متحدہ بہبود اطفال خدمات اور 2015-16 کے بجٹ میں ان کی وزارت کے دیگر شعبوں کو مختص کی ہوئی رقم میں 50 فیصد تخفیف کی گئی ہے ۔ وہ لوک سبھا میں بیان دے رہی تھیں ۔ انہوں نے کہا کہ وزارت کیلئے مختص بجٹ میں تخفیف امکان ہے کہ دیگر سرکاری شعبوں کیلئے کی ہوئی تخفیف کے مماثل ہے اور ان کی وزارت و وزارت صحت عنقریب مرکزی وزیر فینانس سے ملاقات کریں گے ۔ پارلیمنٹ اجلاس کے اختتام پذیر ہونے پر اُن سے ملاقات کر کے درخواست کی جائے گی کہ بجٹ میں مختص کی ہوئی رقم میں اضافہ کیا جائے ۔ مینکا گاندھی نے وقفہ سوالات کے دوران یہ بیان دیا ۔ چونکہ مرکزی وزیر فینانس ارون جیٹلی ایوان میں موجود تھے اپوزیشن ارکان نے مطالبہ کیا کہ انہیں اہم وزارت جیسے بہبودی خواتین و اطفال کے بجٹ میں تخفیف کی وجہ بیان کریں۔ تاہم اسپیکر سمترا مہاجن نے اپوزیشن ارکان کے مطالبہ پر توجہ نہیں دی ۔ مینکا گاندھی نے کہا کہ اُن کی وزارت مرکز کی زیر سرپرستی وزارت تھی اور خود انتخابی اسکیم کے تحت کام کرتی ہے ۔ یہ اسکیم 6 ماہ سے 6 سال تک عمر کے تمام بچوں کیلئے ہے ۔ 14 لاکھ روپئے آنگن واڑی سنٹرس کیلئے مختص کئے گئے ہیں اور 31 ڈسمبر 2014 تک یہ رقم 13.42 لاکھ روپئے تھی۔ مینکا گاندھی نے کہا کہ یہ اسکیم 6 خدمات کیلئے ایک متحدہ پیاکیج فراہم کرتی ہے جو ناقص تغذیہ کی تکمیل ‘ماقبل اسکول غیر رسمی تعلیم ‘تغذیہ اور صحت کی تعلیم ‘احتیاطی مدافعتی تدابیر ‘صحت کا معائنہ اور حوالے کی خدمت اس میں شامل ہیں ۔

TOPPOPULARRECENT