Saturday , September 22 2018
Home / شہر کی خبریں / وظیفہ پر سبکدوشی کی عمر میں اضافہ نہیں ہوگا

وظیفہ پر سبکدوشی کی عمر میں اضافہ نہیں ہوگا

58 سال حد برقرار ‘نوجوانوں کو روزگار فراہم کرنے حکومت سنجیدہ ،اسمبلی میں ای راجندر کا بیان

58 سال حد برقرار ‘نوجوانوں کو روزگار فراہم کرنے حکومت سنجیدہ ،اسمبلی میں ای راجندر کا بیان
حیدرآباد۔/20نومبر، ( سیاست نیوز) تلنگانہ حکومت نے واضح کردیا کہ سرکاری ملازم وظیفہ پر سبکدوشی کی عمر کی حد میں اضافہ نہیں کیا جائے گا۔ وظیفہ پر سبکدوشی کی موجودہ عمر 58سال برقرار رہے گی اور حکومت اسے 60کرنے کا کوئی منصوبہ نہیں رکھتی۔ اسمبلی میں وقفہ سوالات کے دوران اے گاندھی اور ٹی پرکاش گوڑ کے سوال پر وزیر فینانس ای راجندر نے کہا کہ تعلیم یافتہ بے روزگار نوجوانوں کو روز گار فراہم کرنے کے سلسلہ میں حکومت سنجیدہ ہے اور اسی لئے وظیفہ پر سبکدوشی کی عمر میں اضافہ نہیں کیا جائے گا کیونکہ اس سے بے روزگار نوجوان ملازمتوں سے محروم رہیں گے۔ وزیر فینانس نے بتایا کہ تلنگانہ میں جملہ منظورہ سرکاری جائیدادیں 5لاکھ 25ہزار 673 ہیں جن میں موجودہ ملازمین کی جملہ تعداد4لاکھ 15ہزار 931 ہے جس میں مستقل کے علاوہ کنٹراکٹ، گرانٹ اِن ایڈ اور دیگر عارضی زمروں کے ملازمین شامل ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ تلنگانہ میں ایک لاکھ 7ہزار 744 مخلوعہ جائیدادوں کی نشاندہی کی گئی ہے اور حکومت مرحلہ وار انداز میں اسے پُر کرنے کا عزم رکھتی ہے۔ ضمنی سوالات کے جواب میں وزیر فینانس نے کہا کہ تلنگانہ میں لاکھوں تعلیم یافتہ بیروزگار نوجوان طویل عرصہ سے ملازمتوں کی اُمید لگائے بیٹھے ہیں اور حکومت انہیں وعدہ کے مطابق روزگار فراہم کرنے کے اقدامات کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ ہر سال 8تا10ہزار افراد وظیفہ پر سبکدوش ہوتے ہیں ان کی جگہ نوجوانوں کو مواقع دیئے جائیں گے۔ راجندر نے کہا کہ حکومت نے تلنگانہ جدوجہد کے دوران نوجوانوں کو روزگار کی فراہمی کے سلسلہ میں جو وعدہ کیا تھا اس پر عمل آوری کی جائے گی۔ ارکان اسمبلی گاندھی اور پرکاش گوڑ نے ملازمین کی یونینوں کے اس مطالبہ کا حوالہ دیا کہ وظیفہ پر سبکدوشی کی حد عمر میں اضافہ کیا جائے۔ واضح رہے کہ آندھرا پردیش حکومت نے اپنے سرکاری ملازمین کے وظیفہ پر سبکدوشی کی حد عمر 60سال کردی ہے۔

TOPPOPULARRECENT