Sunday , January 21 2018
Home / شہر کی خبریں / وقار الدین نے بریانی کھانے کی ضد کی تھی

وقار الدین نے بریانی کھانے کی ضد کی تھی

حیدرآباد۔/8اپریل، ( سیاست نیوز) ضلع ورنگل کے انکاؤنٹر میں وقار اور اس کے ساتھیوں کو ہلاک کرنے کے بعد اب پولیس نے وقار اور اس کے ساتھیوں پر الزامات کا آغاز کردیا ہے اور پولیس کے الزامات وقار کو بدنام کرنے کے ساتھ ساتھ اس کے کردار کو جھگڑالو اور پولیس دشمن ثابت کررہے ہیں ۔ یاد رہے کہ گزشتہ روز ورنگل ضلع میں پولیس نے ایک مبینہ فرضی انکاؤ

حیدرآباد۔/8اپریل، ( سیاست نیوز) ضلع ورنگل کے انکاؤنٹر میں وقار اور اس کے ساتھیوں کو ہلاک کرنے کے بعد اب پولیس نے وقار اور اس کے ساتھیوں پر الزامات کا آغاز کردیا ہے اور پولیس کے الزامات وقار کو بدنام کرنے کے ساتھ ساتھ اس کے کردار کو جھگڑالو اور پولیس دشمن ثابت کررہے ہیں ۔ یاد رہے کہ گزشتہ روز ورنگل ضلع میں پولیس نے ایک مبینہ فرضی انکاؤنٹر میں مشتبہ دہشت گرد سید وقار الدین اور اس کے ساتھیوں کو ہلاک کردیا تھا۔ اب پولیس نے الزام عائد کیا ہے کہ چار سال قبل ٹھیک اسی مقام پر وقار اور اس کے ساتھیوں نے بریانی کے لئے پولیس سے جھگڑا کیا تھا اور ٹھیک اسی مقام پر وقار اور اس کے ساتھی انکاؤنٹر میں ہلاک کردیئے گئے۔ پولیس کے اس الزام کو محض اتفاق تصور کریں یا پھر سازش جس مقام پر بریانی کی خواہش کی گئی تھی اسی مقام پر موت کی نیند سلادیا گیا۔ بتایا جاتا ہے کہ 12نومبر سال 2011 کے دن وقار اور اس کے ساتھیوں کو جب ورنگل جیل سے ایل بی نگر کی مقامی عدالت میں پیش کیا گیا تھا اور جب انہیں واپس ورنگل جیل میں منتقل کیا جارہا تھا کہ راستہ میں وقار احمد اور اس کے ساتھیوں نے بریانی کھانے کی خواہش کا اظہار کیا تھا۔ تاہم پولیس نے ان کی خواہش کو پورا کرنے سے انکار کردیا تھا۔ پولیس کا الزام تھا کہ وقار اور اس کے تین ساتھیوں نے پولیس سے بحث و تکرار کی تھی۔
آلیر منڈل ضلع نلگنڈہ کے کندی گڈھ تانڈے میں بحث و تکرار جھگڑے میں تبدیل ہونے کے بعد اس وقت پولیس نے دعویٰ کیا تھا کہ اسکارٹ پولیس نے اس وقاعہ کی جنگاؤں پولیس اسٹیشن میں شکایت کروائی تھی۔

TOPPOPULARRECENT