Wednesday , January 17 2018
Home / سیاسیات / وقت مقررہ میں تحقیقات سے سی بی آئی کا انکار

وقت مقررہ میں تحقیقات سے سی بی آئی کا انکار

حکومت کرناٹک دوبارہ رجوع‘چیف منسٹر سدارامیا کا اعلان

حکومت کرناٹک دوبارہ رجوع‘چیف منسٹر سدارامیا کا اعلان
نئی دہلی 6 مارچ (سیاست ڈاٹ کام ) مرکزی تحقیقاتی ادارہ (سی بی آئی ) نے حکومت کرناٹک کی اس درخواست کو مسترد کردیا کہ آئی اے ایس آفیسر ڈی کے روی کی مبینہ خودکشی واقعہ کی وقت مقررہ میں تحقیقات مکمل کرلی جائے اور کہا کہ قانون میں ایسی کوئی گنجائش نہیں ہیکہ مقررہ مدت میں تحقیقات انجام دی جائے ۔ سی بی آئی درائع نے آج بتایا کہ ڈپارٹمنٹ آف پرسونل اینڈ ٹریننگ کو ایک مکتوب روانہ کرتے ہوئے یہ گذارش کی گئی ہیکہ روی کی موت کی تحقیقات کی ذمہ داری لینے کیلئے ایک تازہ اعلامیہ جاری کیا جائے ۔انہوں نے تبایا کہ اعلامیہ وصول ہونے کے بعد ایجنسی یہ جائزہ لے گی کہ متنازعہ موت کی تحقیقات کی جائے یا نہیں جبکہ کرناٹک کے سیاسی حلقوں نے مشتبہ حالت میں روی کی موت پر زبردست احتجاجی مظاہرے کئے تھے۔ ذرائع نے بتایا کہ ڈپارٹمنٹ آف پرسونل اینڈ ٹریننگ سے ایک نوٹیفکیشن اس درخواست کے ساتھ وصول ہوا ہیکہ اندرون 3 ماہ تحقیقات مکمل کرلی جائے لیکن یہ قانون کے مطابق نہیں ہے۔ ذرائع نے کہا کہ ریاستی حکومت نے تحقیقات کی ذمہ داری سی بی آئی کے حوالے کی ہے لیکن اس کی تکمیل کیلئے کوئی وقت مقرر نہیں کیا ہے جس کے پیش نظر ریاستی حکومت سے ایک اور تازہ اعلامیہ (نوٹفکیشن) طلب کیا گیا ہے۔ دریں اثناء چیف منسٹر کرناٹک سدارامیا نے آج کہا ہیکہ آئی اے ایس آفیسر ڈی کے روی کی مبینہ خودکشی واقعہ کی مقررہ وقت تحقیقات کی درخواست سی بی آئی کی جانب سے مسترد کردیئے جانے کے بعد ان کی حکومت پھر ایک بار کیس کی تحقیقات کیلئے سی بی آئی سے درخواست کرے گی۔ انہوں نے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ سی بی آئی نے ریاستی حکومت کی یہ درخواست مسترد کرتے ہوئے کہا کہ شرائط کے تابع تحقیقات نہیں کی جاسکتی جس کے پیش نظر ہم دوبارہ سی بی آئی سے رجوع ہوں گے اور اس خصوص میں سی بی آئی کی خواہش کے مطابق تازہ اعلامیہ جاری کیا جائے گا۔

TOPPOPULARRECENT