Wednesday , June 20 2018
Home / اضلاع کی خبریں / وقف بورڈ تقررات کیلئے کونسلنگ جاری

وقف بورڈ تقررات کیلئے کونسلنگ جاری

بنگلورو۔6 ؍جون: (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز )ریاستی وقف بورڈ میں 174اسامیوں کی بھرتی کیلئے محکمۂ تعلیمات عامہ کی طرف سے کروائے گئے مسابقتی امتحان میں منتخب 174امیدواروں کی وقف بورڈ کے سی ای او ایس اے جیلانی کی طرف سے کونسلنگ شروع ہوچکی ہے۔ ان کی کونسلنگ مکمل ہونے کے بعد ان کے تقرر کے سلسلے میں 11جون کو ہونے والی وقف بورڈ کی میٹنگ میں تجویز منظور

بنگلورو۔6 ؍جون: (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز )ریاستی وقف بورڈ میں 174اسامیوں کی بھرتی کیلئے محکمۂ تعلیمات عامہ کی طرف سے کروائے گئے مسابقتی امتحان میں منتخب 174امیدواروں کی وقف بورڈ کے سی ای او ایس اے جیلانی کی طرف سے کونسلنگ شروع ہوچکی ہے۔ ان کی کونسلنگ مکمل ہونے کے بعد ان کے تقرر کے سلسلے میں 11جون کو ہونے والی وقف بورڈ کی میٹنگ میں تجویز منظور کی جائے گی، اور فوری طور پر انہیں تقرر نامے جاری کردئے جائیں گے۔یہ بات ریاستی وقف بورڈ کے چیرمین ڈاکٹر محمد یوسف نے بتائی۔ اخباری نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے انہوںنے بتایاکہ ان ملازمین کی تنخواہوں کی ادائیگی کیلئے محکمۂ اقلیتی بہبود کی طرف سے وقف بورڈ کو 2.38کروڑ روپیوں کی رقم منظور کی گئی ہے، جس کے استعمال سے تین ماہ تک تنخواہوں کی ادائیگی میں کسی طرح کا مسئلہ پیش نہیں آئے گا۔ انہوں نے بتایاکہ وزیر اقلیتی بہبود واوقاف قمر الاسلام نے یہ بھی ہدایت جاری کی ہے کہ وقف بورڈ کیلئے تقررات کے سلسلے میں کروائے گئے مسابقتی امتحان کا خرچ 1.85کروڑ روپے بھی محکمۂ تعلیمات کو حکومت کی طرف سے ہی دیا جائے۔ ساتھ ہی وقف بورڈ کیلئے مزید سپلیمنٹری بجٹ مہیا کرانے کی بھی یقینی دہانی کرائی ہے۔ اس کیلئے چیر مین نے وزیر موصوف کا شکریہ ادا کیا ہے۔ ڈاکٹر یوسف نے بتایاکہ وقف بورڈ کیلئے منتخب 174امیدواروں کی کونسلنگ اور تقرر نامے جاری ہونے کے بعد انہیں ایک تادیڑھ ماہ خصوصی تربیت سے بھی آراستہ کیا جائے گا تاکہ عہدہ سنبھالنے کے فوراً بعد وہ اوقافی امور سے بخوبی واقفیت رکھیں،اور اوقافی مسائل سے نمٹنے کیلئے پوری طرح تیار رہ سکیں۔ان تقررات کے تحت 15وقف آفیسرس ، 30 ایف ڈی اے یا وقف انسپکٹر ،30 آڈیٹرس ، دس لیگل اسسٹنٹ ،20سرویرس ، تین اسٹینو ،27 سکینڈ ڈویژن اسسٹنٹ، 36 ٹائپسٹ اور ڈیٹا انٹری آپریٹر انگریزی اور کنڑا کا تقرر کیا گیاہے۔ مسابقتی امتحان میں انتہائی شفافیت کے ساتھ ان تمام امیدواروں کا انتخاب عمل میں آیا ہے، ان تمام کے عہدے سنبھالنے کے ساتھ ہی ریاستی وقف بورڈ میں عملے کی جو قلت ہے ، اسے کافی حد تک دور کیا جاسکے گا۔

TOPPOPULARRECENT