Friday , June 22 2018
Home / شہر کی خبریں / وقف بورڈ میں جعلی این او سی اجرائی پر جانچ کمیٹی کا کل اجلاس

وقف بورڈ میں جعلی این او سی اجرائی پر جانچ کمیٹی کا کل اجلاس

لینڈ مافیا سے تحقیقات میں رکاوٹ پیدا کرنے کی کوشش، بورڈ ارکان سے بھی مشاورت متوقع

حیدرآباد۔/9ڈسمبر، ( سیاست نیوز) وقف بورڈ میں جعلی این او سی اجرائی اسکام کی جانچ کرنے والی سہ رکنی کمیٹی کا اجلاس پیر 11 ڈسمبر کو طلب کیا گیا ہے۔ واضح رہے کہ ملکاجگری کی 6 ایکر قیمتی اراضی کو خانگی قرار دیتے ہوئے وقف بورڈ کے چیف ایکزیکیٹو آفیسر منان فاروقی کی دستخط سے جعلی این او سی جاری کیا گیا یہ اوقافی اراضی درگاہ حضرت میر محمود ؒ راجندر نگر کے تحت ہے۔ روز نامہ ’سیاست‘ نے اس جعلی این او سی اسکام کو بے نقاب کیا تھا جس کے بعد سے وقف بورڈ میں ہلچل ہے اور اس معاملہ کو پولیس سے رجوع کیا گیا۔ پولیس تحقیقات کے علاوہ بورڈ کے 3 ارکان سے داخلی جانچ کا فیصلہ کیا گیا۔ وقف بورڈ کے ارکان ملک معتصم خاں، مرزا انور بیگ اور صوفیہ بیگم پر مشتمل سہ رکنی کمیٹی کو اسکام کی جانچ کی ذمہ داری دی گئی۔ 25 نومبر کو بورڈ کے اجلاس میں یہ فیصلہ کیا گیا لیکن مختلف وجوہات کے سبب کمیٹی کا ایک بھی اجلاس منعقد نہیں ہوا۔ توقع ہے کہ کمیٹی پہلے اجلاس میں مختلف سیکشنوں سے این او سی کی اجرائی سے متعلق طریقہ کار اور ملکاجگری کی مذکورہ اراضی سے متعلق دستاویزات طلب کریں گے۔ پہلے اجلاس میں تحقیقات کے طریقہ کار کو طئے کیا جائے گا۔ بتایا جاتا ہے کہ وقف بورڈ میں سرگرم لینڈ مافیا کی جانب سے تحقیقات میں رکاوٹ پیدا کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔ اسی دوران کمیٹی کے رکن مولانا ملک معتصم خاں نے کہا کہ اس سنگین معاملہ کے حقائق کا پتہ چلانے کیلئے مختلف زاویوں سے جانچ کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ وقف بورڈ میں جاری اس طرح کی غیر قانونی سرگرمیوں کے سلسلہ میں بعض اطلاعات موصول ہوئی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وقف بورڈ سے جعلی این او سی کی اجرائی کا معاملہ انتہائی سنگین ہے۔ پتہ نہیں سابق میں اس طرح کے این او سیز کے ذریعہ کتنی قیمتی اوقافی اراضیات اور جائیدادوں کو لینڈ مافیا کے حوالے کردیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ ضرورت پڑنے پر وہ بورڈ کے دیگر ارکان اور خاص طور پر سینئر ارکان سے بھی مشاورت کرتے ہوئے تحقیقاتی عمل کو آگے بڑھائیں گے۔ صدرنشین وقف بورڈ محمد سلیم اس اسکام کے خاطیوں کی نشاندہی اور انہیں سزا دینے کے معاملہ میں سنجیدہ دکھائی دے رہے ہیں۔ انہوں نے پولیس عہدیداروں کو ہدایت دی کہ تحقیقات میں کوئی نرمی نہ برتیں۔ عابڈز پولیس اسٹیشن کی تحقیقاتی ٹیم نے ابھی تک مختلف عہدیداروں کے بیانات قلمبند کئے ہیں۔ دستاویزات بھی اکٹھا کئے گئے اور این او سی پر موجود چیف ایکزیکیٹو آفیسر کی دستخط کی جانچ کی جارہی ہے ۔ ہوسکتا ہے کہ اس معاملہ کو فارنسک لیب سے رجوع کیا جائے گا۔ حکومت اس معاملہ کو سی بی سی آئی ڈی سے رجوع کرنے کا منصوبہ رکھتی ہے تاہم اسے چیف ایکزیکیٹو آفیسر کی رپورٹ کا انتظار ہے۔ وقف بورڈ کے اجلاس میں اس سلسلہ میں منظورہ قرارداد کی نقل کے ساتھ چیف ایکزیکیٹو آفیسر کو رپورٹ روانہ کرنے کی سکریٹری اقلیتی بہبود نے ہدایت دی ہے۔ اس معاملہ کی جانچ کے سلسلہ میں چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے اعلیٰ عہدیداروں کو نگرانی کی ہدایت دی ہے۔ چیف منسٹر کے پاس منعقدہ جائزہ اجلاس میں بورڈ کی کارکردگی پرعدم اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے بورڈ کے دفتر کو مہربند کردیا گیا تھا۔ بعد میں بتدریج روز مرہ کے کام کاج بحال ہوئے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT