Tuesday , April 24 2018
Home / شہر کی خبریں / وقف بورڈ میں شفافیت اور عوامی مسائل کی یکسوئی اولین ترجیح

وقف بورڈ میں شفافیت اور عوامی مسائل کی یکسوئی اولین ترجیح

ہفتہ میں ایک دن عوامی سماعت، شاہنواز قاسم نے سی ای او وقف بورڈ کا جائزہ حاصل کرلیا
وقف جائیدادوں کے تحفظ کا یقین : محمد سلیم
حیدرآباد ۔ 3 ۔اپریل (سیاست نیوز) تلنگانہ وقف بورڈ کے چیف اگزیکیٹیو آفیسر کی حیثیت سے سینئر آئی پی ایس عہدیدار شاہنواز قاسم نے آج جائزہ حاصل کرلیا ۔ انہوں نے وقف بورڈ میں شفافیت پیدا کرنے اور عوام کو بورڈ کی کارکردگی سے واقف کرانے کیلئے ٹکنالوجی کے استعمال کا فیصلہ کیا ہے۔ ہفتہ میں ایک دن عوامی شکایات کی وہ سماعت کریں گے جس میں وقف اور دیگر اقلیتی اداروں سے متعلق مسائل کی سماعت کی جائے گی ۔ شاہنواز قاسم عوام سے شکایات اور تجاویز حاصل کرنے کیلئے اپنے ای میل کو استعمال کریں گے۔ جائزہ حاصل کرنے کے بعد میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ وہ بورڈ کی کارکردگی کا جائزہ لے رہے ہیں اور ہر سطح پر شفافیت اور منظم انداز میں کام کو یقینی بنایا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ جعلی این او سی اور دیگر معاملات کی دستاویزات کا جائزہ لینے کے بعد ہی وہ اس بارے میں کوئی تبصرہ کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ ٹکنالوجی کے استعمال کے ذریعہ وقف بورڈ کی تمام تر سرگرمیاں عوام کے مشاہدہ کیلئے ویب سائیٹ پر پیش کی جائیں گی ۔ بورڈ جو بھی فیصلہ کرے گا ، وہ ویب سائیٹ پر عوام کیلئے دستیاب رہے گا۔ انہوں نے کہا کہ بورڈ میں سسٹم کی عدم موجودگی سے مختلف مسائل پیدا ہوئے ہیں۔ وہ چاہتے ہیںکہ کارکردگی اور مکمل نظام کو منظم سسٹم سے مربوط کیا جائے اور ہر کوئی اپنی ذمہ داری کو بخوبی انجام دے۔ کارکردگی کے سلسلہ میں کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا ۔ انہوں نے کہا کہ وہ عہدیداروں پر انحصار کے بجائے عوام کو مطمئن کرنے کی کوشش کریں گے تاکہ ان کے مسائل کی یکسوئی ہو۔ حکومت نے اوقافی جائیدادوں کی صیانت کیلئے انہیں یہ ذمہ داری دی ہے ۔ وہ اپنی ذمہ داری نبھانے کیلئے اپنے تجربہ کا بھرپور استعمال کریں گے۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ بورڈ کے عہدیداروں اور ملازمین کا انہیں مکمل تعاون حاصل رہے گا۔ انہوں نے کہا کہ وہ خالص خدمت کے جذبہ کے تحت محکمہ اقلیتی بہبود میں فرائض انجام دینے کیلئے راضی ہوئے ہیں۔ ایک سوال کے جواب میں شاہنواز قاسم نے کہا کہ انہیں اس بات کی اہمیت نہیں کہ چیف اگزیکیٹیو آفیسر کا عہدہ ان کے رینک کے اعتبار سے کم ہے۔ انہوں نے کہا کہ خدمت کے جذبہ کے سامنے عہدہ کی کوئی اہمیت نہیں۔ اسی دوران صدرنشین وقف بورڈ محمد سلیم نے شاہنواز قاسم کا استقبال کیا اور امید ظاہر کی کہ وقف بورڈ سے دھاندلیوں کے خاتمہ میں وہ اہم رول ادا کریں گے۔ محمد سلیم نے کہا کہ محکمہ پولیس میں شاہنواز قاسم ایک دیانتدار عہدیدار کی حیثیت سے عزت کی نگاہ سے دیکھے جاتے ہیں۔ ایسٹ زون ڈی سی پی کے عہدہ پر جس وقت وہ مامور تھے ، محمد سلیم نے ان سے ریوالور لائسنس کی تجدید کے سلسلہ میں ملاقات کی تھی ۔ محمد سلیم نے کہا کہ کھمم کے ایس پی اور سائبر آباد کے جوائنٹ کمشنر کی حیثیت سے شاہنواز قاسم کی نمایاں خدمات ہیں۔ خانم میٹ کی 400 سالہ قدیم قطب شاہی مسجد اور اس کی اراضی کا وقف بورڈ کو قبضہ دلانے میں شاہنواز قاسم نے اہم رول ادا کیا ۔ جو کام گزشتہ 70 برسوں سے نہیں ہوپایا ، شاہنواز قاسم کے تعاون سے وقف بورڈ کو کامیابی ملی ۔ انہوں نے کہا کہ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے بورڈ میں دھاندلیوں کے خاتمہ کیلئے ایک دیانتدار عہدیدار کو مقررکیا ہے جو وقف بورڈ کیلئے کسی نعمت سے کم نہیں۔ محمد سلیم نے کہا اگرچہ چیف اگزیکیٹیو آفیسر کا عہدہ شاہنواز قاسم کیلئے چھوٹا ہے لیکن قوم کی خدمت کے جذبہ کے تحت انہوں نے یہ ذمہ داری قبول کی۔ محکمہ پولیس کی طرح وقف بورڈ کو بھی وہ بہتر کارکردگی کے ادارہ میں تبدیل کردیں گے۔

TOPPOPULARRECENT