Wednesday , December 19 2018

وقف بورڈ کا ریکارڈ ڈیجٹیلائز : سید عمر جلیل

جائیدادوں اور اراضیات کے تحفظ کو یقینی بنایا جائے گا ، سکریٹری اقلیتی بہبود کا بیان
حیدرآباد۔ 23 نومبر (سیاست نیوز) وقف بورڈ کے ریکارڈ کو ڈیجٹلائز کرتے ہوئے جائیدادوں اور اراضیات کے تحفظ کو یقینی بنایا جائے گا۔ سکریٹری اقلیتی بہبود سید عمر جلیل نے آج حج ہائوز پہنچ کر وقف بورڈ کے مختلف سیکشنوں کا معائنہ کیا جہاں ریونیو عہدیدار فائیلوں کی جانچ میں مصروف ہیں۔ عمر جلیل نے ریونیو عہدیداروں سے کہا کہ وہ فائلوں کی جانچ کی تکمیل کے بعد ریکارڈ سیکشن میں موجود دستاویزات کی فہرست تیار کریں۔ ضلع واری سطح پر دستاویزات کو ترتیب دیا جائے جس کے بعد اسکیاننگ کا کام شروع ہوگا۔ سکریٹری نے کام کی پیشرفت پر اطمینان کا اظہار کیا اور کہا کہ ریونیو عہدیداروں کی ٹیم نے تقریباً تمام سیکشنوں کی فائلوں کی جانچ مکمل کرلی ہے۔ انہوں نے فائلوں کو رکھنے کے لیے موجودہ الماریوں کی خستہ حالی پر توجہ دینے چیف ایگزیکٹیو آفیسر منان فاروقی کو ہدایت دی۔ وقف بورڈ میں فائلوں کو رکھنے کے لیے صحیح ریکس اور الماریاں تک نہیں ہیں۔ انتہائی خستہ حال فرنیچر میں کام انجام دیا جارہا ہے۔ سکریٹری اقلیتی بہبود نے چیف ایگزیکٹیو آفیسر کو ہدایت دی کہ وہ نئی الماریوں کے لیے حکومت کو تجویز پیش کریں اور وہ 10 لاکھ روپئے تک کی منظوری دینے تیار ہیں۔ حکومت کا مقصد تمام ریکارڈ کو محفوظ کرنا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ سیکشنوں میں روزمرہ کے کام کاج بتدریج بحال ہوچکے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ سیکشنوں میں جانچ کا کام توقع ہے کہ کل تک مکمل ہوجائے گا جس کے بعد ریونیو حکام ریکارڈ سیکشن کا رخ کریں گے۔ عمر جلیل نے مختلف سیکشنوں کا دورہ کرتے ہوئے عہدیداروں سے بات چیت کی۔ انہوں نے کہا کہ چیف منسٹر کے چندر شیکھر رائو نے ریکارڈ محفوظ کرنے کے لیے وقف بورڈ کے سیکشنوں کو مہربند کرنے کی ہدایت دی تھی۔ حکومت کا یہ فیصلہ بورڈ اور اوقافی جائیدادوں کے حق میں ہے۔ انہوں نے کہا کہ چیف منسٹر نے تمام ضلع کلکٹرس کو ہدایت دی ہے کہ وہ اراضی سروے میں اوقافی اراضیات کی تفصیلات سے روزانہ کی بنیاد پر ان کے دفتر کو واقف کرائیں۔ انہوں نے کہا کہ چیف منسٹر اوقافی امور کے سلسلہ میں دو مرتبہ جائزہ اجلاس منعقد کرچکے ہیں۔ توقع ہے کہ وہ اعلی سطحی عہدیداروں کی ٹیم کے ذریعہ ریکارڈ کی جانچ کے اقدامات کریں گے۔

TOPPOPULARRECENT