وقف بورڈ کی تقسیم کے عمل کو آئندہ ماہ منظوری

مکہ مکرمہ میں رباط کے مسئلہ کی یکسوئی کا بھی تیقن ،جوائنٹ سکریٹری مرکزی و زرات اقلیتی بہبود راکیش موہن کا بیان

مکہ مکرمہ میں رباط کے مسئلہ کی یکسوئی کا بھی تیقن ،جوائنٹ سکریٹری مرکزی و زرات اقلیتی بہبود راکیش موہن کا بیان
حیدرآباد۔/22جنوری، ( سیاست نیوز) مرکزی وزارت اقلیتی بہبود آئندہ ماہ وقف بورڈ کی تقسیم کا عمل مکمل کردے گی جس کے بعد تلنگانہ اور آندھرا پردیش حکومتوں کو اوقافی جائیدادوں کے تحفظ اور ان کی ترقی کے سلسلہ میں اقدامات میں مدد ملے گی۔ مرکز نے مکہ مکرمہ میں موجود حیدرآبادی رباط میں تلنگانہ عازمین حج کے قیام کے مسئلہ کی یکسوئی کا بھی تیقن دیاہے۔ مرکزی وزارت اقلیتی بہبود کے جوائنٹ سکریٹری مسٹر راکیش موہن نے آج حج ہاوز نامپلی پہنچ کر مختلف اقلیتی اداروں کا معائنہ کیا۔ اس موقع پر اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے راکیش موہن نے کہا کہ وقف بورڈ کی تقسیم مرکزی حکومت کے تحت ہے اور وزارت اقلیتی اُمور کے سکریٹری اس مسئلہ کا جائزہ لے رہے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ 2فروری کو سنٹرل وقف کونسل کا اجلاس منعقد ہوگا جس میں وقف بورڈ کی تقسیم کو منظوری دی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ وقف بورڈ کی تقسیم کا عمل فروری میں مکمل کرلیا جائے گا۔ راکیش موہن نے حیدرآبادی رباط کے تنازعہ کے بارے میں پوچھے جانے پر بتایا کہ یو پی اے دور حکومت میں اسوقت کے وزیر فینانس پی چدمبرم کی قیادت میں گروپ آف منسٹرس تشکیل دیا گیا تھا جس میں غلام نبی آزاد، رحمان خان اور سلمان خورشید شامل تھے۔ گروپ آف منسٹرس نے حکومت کو تجویز پیش کی کہ سنٹرل حج کمیٹی کو وزارت خارجہ کے بجائے وزارت اقلیتی اُمور کے تحت منتقل کیا جائے تاکہ اس کی کارکردگی بہتر بنائی جاسکے۔ انہوں نے کہا کہ رباط کے تعطل کا مسئلہ وزارت خارجہ سے متعلق ہے پھر بھی وزارت اقلیتی اُمور اس مسئلہ کی یکسوئی کے اقدامات کرے گی تاکہ تلنگانہ کے عازمین کو قیام کی سہولت فراہم ہو۔ راکیش موہن نے اوقافی جائیدادوں پر ناجائز قبضے اور ان کے تحفظ کے سلسلہ میں کمشنریٹ کے قیام کی تائید کی۔ انہوں نے کہا کہ دیگر ریاستوں میں بھی اوقافی جائیدادوں کے تحفظ اور ان کی ترقی کے سلسلہ میں مرکزی حکومت کی جانب سے رہنمائی کی جارہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اقلیتی اداروں کی تقسیم میں تاخیر کے سبب تلنگانہ اور آندھرا پردیش میں اقلیتی اسکیمات پر عمل آوری کی رفتار سست رہی۔ انہوں نے کہا کہ مرکز اسکالر شپ پر موثر عمل آوری کے سلسلہ میں سنجیدہ ہے اور اس کے لئے زائد بجٹ مختص کیا گیا ہے۔ مسٹر راکیش موہن نے حج ہاوز میں اسپیشل آفیسر وقف بورڈ جناب جلال الدین اکبر سے دونوں ریاستوں میں اوقافی جائیدادوں کے موقف کے بارے میں تفصیلات حاصل کی۔ انہوں نے اوقافی جائیدادوں کے کمپیوٹرائزیشن کے کام کا معائنہ کیا اور اس کام کی عاجلانہ تکمیل کی خواہش ظاہر کی۔ انہوں نے اقلیتی فینانس کارپوریشن کے تلنگانہ اور آندھرا پردیش دفاتر کا معائنہ کیا اور مرکز کی اسکالر شپ اسکیم پر عمل آوری کی پیشرفت کا جائزہ لیا۔ منیجنگ ڈائرکٹر اقلیتی فینانس کارپوریشن پروفیسر ایس اے شکور نے مرکزی اسکیمات بالخصوص اسکالر شپ پر عمل آوری کے سلسلہ میں اعداد و شمار پیش کئے۔ راکیش موہن نے حج 2015 کیلئے درخواستوں کی اجرائی اور وصولی سے متعلق کاونٹرس کا بھی معائنہ کیا۔

TOPPOPULARRECENT