Monday , December 18 2017
Home / شہر کی خبریں / وقف بورڈ کی کارکردگی پر اعلیٰ سطحی جائزہ اجلاس طلب

وقف بورڈ کی کارکردگی پر اعلیٰ سطحی جائزہ اجلاس طلب

اوقافی جائیدادوں کا تحفظ، آمدنی میں اضافہ کے اقدام جیسے اُمور کا جائزہ

حیدرآباد ۔ 11۔ اکتوبر (سیاست نیوز) ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی نے کل 12 اکتوبر کو وقف بورڈ کی کارکردگی پر اعلیٰ سطحی جائزہ اجلاس طلب کیا ہے۔ یہ اجلاس دن بھر دو مرحلوں میں جاری رہے گا ۔ پہلے مرحلہ میں وقف بورڈ کے عہدیداروں کے ساتھ اوقافی جائیدادوں کے تحفظ اور ترقی، درگاہوں کے ہراج، آمدنی میں اضافہ کے اقدامات اور قصوروار متولیوں کے خلاف کارروائی جیسے امور کا جائزہ لیا جائے گا جبکہ دوپہر کے بعد بورڈ کے اسٹانڈنگ کونسل کے ساتھ میٹنگ ہوگی جس میں مختلف عدالتوں میں زیر دوران مقدمات کے موقف کے بارے میں معلومات حاصل کی جائیں گی ۔ ڈپٹی چیف منسٹر نے وقف بورڈ کے عہدیداروں کو ایجنڈہ کے مطابق مکمل تیاری کے ساتھ اجلاس میں شرکت کی ہدایت دی ہے۔ انہوں نے کہا کہ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ اوقافی جائیدادوں کے تحفظ کے سلسلہ میں سنجیدہ ہے اور جاریہ اراضی سروے میں جہاں بھی اوقافی اراضیات کی نشاندہی ہوگی ، انہیں ریونیو ریکارڈ میں وقف کی حیثیت سے درج کیا جائے گا ۔ انہوں نے کہا کہ اوقافی جائیدادوںکی آمدنی میں اضافہ کے ذریعہ بورڈ کو مستحکم کیا جاسکتا ہے۔ محمود علی نے وقف بورڈ کے عملہ کی تعداد میں اضافہ کیلئے چیف منسٹر سے سفارش کرنے سے اتفاق کیا تاکہ بورڈ کی کارکردگی کو بہتر بنایا جاسکے۔ گزشتہ تین برسوں میں یہ پہلا موقع ہے جب وقف بورڈ کے امور پر وسیع تر اعلیٰ سطحی اجلاس طلب کیا گیا ہے۔

حکومت کے مشیر اے کے خاں ، سکریٹری اقلیتی امور سید عمر جلیل اور وقف بورڈ کے صدرنشین محمد سلیم اجلاس میں شرکت کریں گے۔ بتایا جاتا ہے کہ 17 نکاتی ایجنڈے کو قطعیت دی گئی۔ وقف بورڈ کو گرانٹ ان ایڈ کے طور پر حکومت سے موصولہ بجٹ اور گزشتہ تین برسوں میں اس کے خرچ کی تفصیلات طلب کی گئی ہیں۔ حکومت کی منظوری کے بغیر کئے گئے تقررات ، 11 اوقافی جائیدادوں کو 30 سال کی لیز پر دینے کے اقدامات ، وقف ریکارڈ کو ریونیو ریکارڈ سے مربوط کرنا ، بورڈ میں اسٹاف کی ضرورت ، عدالتوں میں زیر دوران مقدمات کی تفصیل اور اسٹانڈنگ کونسلس کی کارکردگی ، سروے کمشنر رپورٹ پر وقف بورڈ کی کارروائی ، وقف کامپلکسوں اور ان سے حاصل ہونے والے کرایہ کی تفصیلات ، درگاہ حضرت جہانگیر پیراںؒ ، درگاہ حضرت جان پاک شہید نلگنڈہ اور درگاہ اروا پلی سوریا پیٹ کے انتظامات کے ہراج کی تفصیلات ، تشہیری ہورڈنگس کی آمدنی، حج ہاؤز سے متصل زیر تعمیر کی لیز اور گزشتہ 6 ماہ کے دوران متولیوں کو ادا کئے گئے بقایہ جات کی تفصیلات طلب کی گئی ہیں۔ اسٹانڈنگ کونسل کے ساتھ اجلاس میں ہائیکورٹ اور دیگر عدالتوں میں زیر دوران مقدمات اور ان کے موقف کے بارے میں بات چیت کی جائے گی ۔ وقف بورڈ کے خلاف عدالتی فیصلوں کی وجوہات کا جائزہ لیا جائے گا۔

TOPPOPULARRECENT