Thursday , December 14 2017
Home / شہر کی خبریں / وقف بورڈ کے اعلیٰ عہدیداروں کا عوام سے غیرجانبدارانہ رویہ

وقف بورڈ کے اعلیٰ عہدیداروں کا عوام سے غیرجانبدارانہ رویہ

وقف بورڈ کے آفیسر پر اے سی پی کے عہدیداروں کی نظر
حیدرآباد ۔ 23 ستمبر (سیاست نیوز) اوقافی جائیدادوں کا تحفظ کرنا مسلمانوں پر فرض مانا جاتا ہے۔ وقف املاک اللہ تعالیٰ کی امانت ہے۔ اوقافی اراضیات پر کئی لینڈ گرابرس قابض ہوچکے ہیں۔ ان پر جب بھی کوئی دباؤ بنتا ہے تو یہ سیاسی قائدین کی مدد سے کنارہ کشی اختیار کرلیتے ہیں۔ ایسی صورت میں اگر کوئی عام آدمی وقف بورڈ سے رجوع ہوکر شکایت کرنے پر انہیں ڈانٹ اور جھڑکیوں کا سامنا کرنا پڑتا ہے اور وقف بورڈ کے اعلیٰ عہدیداروں کا رویہ عوام پر غیرجانبدارانہ ہوجاتا ہے جس کی وجہ سے عوام میں غم و غصہ کی لہر دوڑ رہی ہے۔ 21 ستمبر کو مغلپورہ سے تعلق رکھنے والے دو نوجوان کو وقف بورڈ کے سی ای او عبدالمنان فاروقی سے ملاقات کرنے کیلئے تین گھنٹہ طویل انتظار کرنا پڑا ۔نوجوانوں نے ایک درخواست پیش کرتے ہوئے بتایاکہ شاہین نگر کے علاقہ میں واقع محمدیہ ہوٹل کے قریب 500 گز زمین پر چند لینڈ گرابرس کی جانب سے غیرمجاز طور پر تعمیری کام کے خلاف سی ای او سے ان افراد کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیا تو سی ای او نے الٹا برہمی کا اظہار کرتے ہوئے انہیں یہاں سے بھگا دیا اور کہا کہ ایسی فضول باتوں کیلئے ہمارے پاس وقت نہیں ہے۔ گذشتہ تین دنوں سے سوشل میڈیا بڑے پیمانے پر صدرنشین وقف بورڈ محمد سلیم کا عوام پر برہمی کا ویڈیو وائرل ہورہا ہے جس میں صدرنشین نے یہ بات کہی ہیکہ خرچہ پانی کچھ کام ہزاروں دیئے ہیں۔ یہ داداگری میرے پاس نہیں چلے گی اور پھر اپنے گن مین کے ذریعہ اس شخص کو باہر ڈھکیل دینے کا ویڈیو وائرل ہوگیا ہے۔ عوام جووقف بورڈ میں شکایت درج کرنے درخواستیں پیش کررہے ہیں انہیں ہمیشہ مایوسی اور تکالیف کا سامنا درپیش ہے اور کام کاج کیلئے بغیر رشوت کے کوئی کام کاج ہی نہیں ہوگا۔ دو سال قبل اے سی بی کے اعلیٰ عہدیدار وقف بورڈ پر دھاوے کرتے ہوئے کئی افراد کی بدعنوانی کے پردے فاش کیا تھا۔

 

TOPPOPULARRECENT