Saturday , September 22 2018
Home / شہر کی خبریں / وقف بورڈ کے بشمول دو عہدیدار ، چار ملازمین معطل

وقف بورڈ کے بشمول دو عہدیدار ، چار ملازمین معطل

نئے اسپیشل آفیسر کیخلاف ہڑتال پرحکومت کی سخت کارروائی، مختلف شکایات پر مقدمہ درج

نئے اسپیشل آفیسر کیخلاف ہڑتال پرحکومت کی سخت کارروائی، مختلف شکایات پر مقدمہ درج
حیدرآباد 5 مئی (سیاست نیوز) حکومت نے وقف بورڈ کے اسپیشل آفیسر کے جائزہ لینے میں رکاوٹ پیدا کرنے اور وقف بورڈ میں ہڑتال پر سخت کارروائی کرتے ہوئے دو عہدیداروں سمیت چار ملازمین کو معطل کردیا ہے ۔ اس سلسلہ میں چیف اگیزیکٹیو آفیسر وقف بورڈ محمد اسد اللہ نے آج رات احکامات جاری کئے ۔ معطل کئے گئے افراد میں سلطان محی الدین لاء آفیسر ‘سلیم باشاہ ڈپٹی سکریٹری ‘ثناء اللہ سینئر اسسٹنٹ اور سید حسین لاء آفیسر شامل ہیں ۔ یہ چاروں وقف بورڈ کی ایمپلائز یونینوں سے تعلق رکھتے ہیں ۔ واضح رہے کہ تنخواہوں کے مسئلہ ملازمین نے کل وقف بورڈ میں اچانک ہڑتال کی تھی ۔ انہوں نے حج ہاوز کی برقی منقطع کردی اور تمام اقلیتی اداروں کی کارکردگی کو ٹھپ کردیا تھا ۔ حکومت اور اعلی عہدیداروں کے خلاف بد تمیزی اور نعرے بازی کی حکومت کو شکایت ملی ۔ آج حکومت کے احکامات کے بعد محمد جلال الدین اکبر جب وقف بورڈ میں اسپیشل آفیسر کے عہدے کا جائزہ لینے پہنچے تو مذکورہ افراد کی قیادت میں ملازمین نے انہیں روک دیا ۔ بتایا جاتا ہے کہ جلال الدین اکبر اور چیف ایگزیکٹیو آفیسر اسد اللہ کے ساتھ بحث و تکرار کی گئی ۔ آخر کار پولیس کو طلب کرنا پڑا ۔ حکومت نیتفصیلی رپورٹ حاصل کرنے کے بعد خاطی افراد کو معطل کرنے کی ہدایت دی ۔ بتایا جاتا ہے کہ مذکورہ چاروں افراد کے دیگر معاملات کی بھی جانچ کی جارہی ہے ۔ جن میں ایک عہدیدار کی جانب سے 10 لاکھ روپئے قرض حاصل کرنے اور عدم ادائیگی کی بھی شکایت ہے ۔ وقف بورڈ کی جانب سے ان کے خلاف پولیس میں شکایت کی گئی جس پر پولیس نے دفعات 341 اور 343 کے تحت مقدمہ درج کرلیا۔

TOPPOPULARRECENT