Sunday , September 23 2018
Home / شہر کی خبریں / ویاٹ کے مقابلہ جی ایس ٹی پر عمل سے ریاست کی آمدنی میں کمی : ایٹالہ راجندر

ویاٹ کے مقابلہ جی ایس ٹی پر عمل سے ریاست کی آمدنی میں کمی : ایٹالہ راجندر

پٹرولیم اشیاء اسٹامپ و رجسٹریشن کو جی ایس ٹی کے دائرہ کار میں شامل کرنے کی مخالفت : وزیر فینانس تلنگانہ
حیدرآباد ۔ 15 ۔ دسمبر : ( سیاست نیوز ) : ریاستی وزیر فینانس ایٹالہ راجندر نے کہا کہ ویاٹ کے مقابلے میں جی ایس ٹی پر عمل آوری سے ریاست کی آمدنی گھٹ گئی ہے ۔ انہوں نے پٹرولیم اشیاء اور اسٹامپ و رجسٹریشن کو جی ایس ٹی کے حدود میں لانے کی مخالفت کی ہے ۔ واضح رہے کہ مرکزی حکومت کی متعارف کردہ اسکیم ’ ون نیشن ون ٹیکس ‘ جی ایس ٹی کی سب سے پہلے ریاست تلنگانہ نے تائید کی تھی جب کہ ملک کے دوسری ریاستیں اعتراض کے ساتھ شکوک کا اظہار کررہی تھی ملک کی مختلف ریاستیں اور سیاسی جماعتوں کے علاوہ عوام یہاں تک وزیر پٹرولیم نے پٹرول اور ڈیزل کو جی ایس ٹی میں شامل کرتے ہوئے عوام کو راحت فراہم کرنے کا مطالبہ کررہے ہیں ۔ ایسے میں وزیر فینانس تلنگانہ ایٹالہ راجندر پٹرول اور ڈیزل کو جی ایس ٹی میں شامل کرنے کی مخالفت کررہے ہیں ۔ مرکزی محکمہ فینانس کے سکریٹری کی جانب سے دہلی میں جی ایس ٹی ایمپاورنمنٹ کمیٹی کا اجلاس طلب کیا جس میں ریاستی وزیر فینانس تلنگانہ ایٹالہ راجندر نے شرکت کی ۔ اجلاس میں جی ایس ٹی کے حدود میں واقع سلابس اور نئی اشیاء کو جی ایس ٹی کے حدود میں لانے کا جائزہ لیا گیا ۔ ریاستی وزیر فینانس ایٹالہ راجندر نے ڈیزل اور پٹرول کے علاوہ اسٹامپس و رجسٹریشن کو جی ایس ٹی کے حدود میں شامل کرنے کی مخالفت کی یا اس تجویز کو تھوڑے دنوں کے لیے ملتوی کردینے پر زور دیا ۔ انہوں نے کہا کہ پٹرولیم اشیاء پر ریاستوں کی حکومتوں سے زیادہ مرکز کا ٹیکس عائد ہورہا ہے ۔ ایٹالہ راجندر نے کہا کہ مرکز ماضی میں پٹرول پر 3.50 روپئے ٹیکس وصول کرتی تھی اب اس کو بڑھا کر 17 روپئے کردیا گیا ہے ۔ مرکزی حکومت پٹرول پر عائد کیے جانے والے اپنے ٹیکس میں پہلے کمی کرلیں ۔ مگر ریاستوں پر مزید مالی بوجھ کا اضافہ کرنے کی ہرگز کوشش نہ کریں ۔ اجلاس کے بعد میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے ایٹالہ راجندرنے کہا کہ نئی ریاست ہونے کے باوجود 21.9 فیصد کی شرح ترقی سے ریاست تلنگانہ ملک کے دوسرے ریاستوں میں سرفہرست ہے ۔ جی ایس ٹی پر عمل آوری سے ریاست چند مسائل سے دوچار ہیں ۔ انہوں نے معیاری تعلیمی ، طبی خدمات اور مختلف طبقات کی ترقی و بہبود کی اسکیمات کے عمل آوری میں ریاست کو مکمل اختیارات دینے کا مرکز سے مطالبہ کیا ۔۔

TOPPOPULARRECENT