Saturday , November 18 2017
Home / ہندوستان / ویاپم اسکام کے خاطی کو بخشا نہیں جائے گا

ویاپم اسکام کے خاطی کو بخشا نہیں جائے گا

چیف منسٹر مدھیہ پردیش شیوراج سنگھ کا بیان

نئی دہلی ۔2اگست ( سیاست ڈاٹ کام )  ویاپم اسکام کے کسی بھی خاطی کو بخشا نہیں جائے گا ۔ چیف منسٹر مدھیہ پردیش شیوراج سنگھ چوہان نے آج کہا کہ کانگریس کا مطالبہ اس مسئلہ پر اُن کے استعفی کے لئے مسترد کردیا جاتا ہے ۔ کیونکہ وہ پہلے شخص تھے جس نے 2013ء میں یہ دیکھنے کے بعد کہ ویاپم میں بے قاعدگیاں موجود ہیں ‘ ایف آئی آر درج کرنے کا حکم دیا تھا ۔ مقدمہ کی پیچیدہ نوعیت کے پیش نظر ایک خصوصی ٹاسک فورس تحقیقات کیلئے تشکیل دی تھی جو ہائیکورٹ کی جانب سے مقرر کردہ خصوصی تحقیقاتی ٹیم کے ساتھ کام کررہی ہے ۔ انہوں نے ای میل کے ذریعہ انٹرویو دیتے ہوئے کہاکہ دو افراد زیر حراست ہے کیونکہ ان کا تعلق ویاپم اسکام سے تھا ۔ ان میں چند سیاستداں ‘ چند سیاسی کارکن اور چند بڑے اور چھوٹے سرکاری عہدیدار ہیں ۔ انہوں نے پُرزور انداز میں کہا کہ اس سے ثابت ہوتا ہے کہ ہم کچھ بھی چھپانے کی کوشش نہیں کررہے ہیں ۔ انہوں نے کہاکہ وہی تھے جنہوں نے ویاپم کی تحقیقات کا اقدام کیا تھا ۔ کسی نے بھی اس وقت اس کا مطالبہ نہیں کیا تھا ۔

انہوں نے ہی تحقیقات ایس ٹی ایف کو منتقل کی تھی ‘ اس لئے ان کے استعفی دینے کا کوئی سوال ہی پیدا نہیں ہوتا ۔ انہوں نے کہا کہ ایس آئی ٹی کی نگرانی میں ایس ٹی ایف نے بالکل شفاف تحقیقات کی ہے ۔ اب سی بی آئی تحقیقات کررہی ہے ۔ ہم تمام اور تمام ابنائے وطن کو سی بی آئی اور عدلیہ پر اعتماد ہے ۔ 47 افراد کی مبینہ موت  کے بارے میں جو ویاپم سے متعلق تھے انہوں نے کہا کہ کوئی بھی ہلاکت درد ناک ہوتی ہے ۔ یہاں تک کہ ملزم کانگریس کا ہی کیوں نہ ہو لیکن اپوزیشن پارٹی مہلوکین کی تعداد مبالغہ آرائی سے پیش کررہی ہے ۔ حالانکہ مجھے بھی ان اموات کا دکھ ہے لیکن کانگریس پارٹی سوگوار ارکان خاندان سے اظہار تعزیت کے بجائے اُن پر اپنی سیاست چلارہی ہے اور اموات کی تعداد میں مبالغہ آرائی کررہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ وہ اموات کی تعداد کے بارے میں جائزہ لے رہے ہیں لیکن بعض افراد کا قبل از وقت انتقال ضرور ہوا لیکن اس کا ویاپم اسکام سے کوئی تعلق نہیں تھا ۔

TOPPOPULARRECENT