Tuesday , January 23 2018
Home / کھیل کی خبریں / ویسٹ انڈیز اور نیوزی لینڈ کے درمیان آج اہم مقابلہ

ویسٹ انڈیز اور نیوزی لینڈ کے درمیان آج اہم مقابلہ

ویلنگٹن ۔ 20 مارچ۔(سیاست ڈاٹ کام) آئی سی سی کرکٹ ورلڈ کپ کے کل یہاں کھیلے جانے والے چوتھے کوارٹر فائنل میں ویسٹ انڈیز کو نیوزی لینڈ کے خلاف حیرت انگیز کھیل کا مظاہرہ کرنے کی ضرورت ہے۔ تاہم کرس گیل کے پوری طرح چاق و چوبند ہونے کے بارے میں ہنوز کوئی یقین نہیں ہے اس کے باوجود کمزور ٹیم سے اچانک ایک پسندیدہ ٹیم کی حیثیت سے ابھرنے والی ٹیم ن

ویلنگٹن ۔ 20 مارچ۔(سیاست ڈاٹ کام) آئی سی سی کرکٹ ورلڈ کپ کے کل یہاں کھیلے جانے والے چوتھے کوارٹر فائنل میں ویسٹ انڈیز کو نیوزی لینڈ کے خلاف حیرت انگیز کھیل کا مظاہرہ کرنے کی ضرورت ہے۔ تاہم کرس گیل کے پوری طرح چاق و چوبند ہونے کے بارے میں ہنوز کوئی یقین نہیں ہے اس کے باوجود کمزور ٹیم سے اچانک ایک پسندیدہ ٹیم کی حیثیت سے ابھرنے والی ٹیم نیوزی لینڈ کے خلاف بہتر کھیل کے مظاہرہ میں کوئی موقع ضائع کرنے والے ناقص کھیل سے گریز کرنا ہوگا۔ یہ دونوں ٹیمیں آخری آٹھویں مرحلہ تک رسائی کے لئے ایک دوسرے سے متضاد دو مختلف راستوں پر چلی ہیں۔ نیوزی لینڈ پہلے تمام چھ میچوں میں کامیابی حاصل کرچکی ہے۔ ویسٹ انڈیز کو گروپ بی میں چوتھا مقام حاصل ہوا ہے۔ ناقابل قیاس ویسٹ انڈیز کو کلیدی ناک آؤٹ گیم میں کرس گیل کے بہترین کھیل کی ضرورت ہے حتی کہ کپتان جیسن ہولڈر بھی کہہ چکے ہیں کہ اس خطرناک اوپنر کے بارے میں میچ کے روز صبح میں قطعی فیصلہ کیا جائے گا ۔ کپتان جیسن نے کہا کہ ’’انھیں (گیل کو ) انجکشن دیا گیا ہے

اور اسکیان کیا گیا ۔ اسکیان میں کوئی اہم پیچیدگی ظاہر نہیں ہوئی ہے ۔ چنانچہ ہم دیکھیں گے کہ وہ آج کیسے رہتے ہیں اور کل صبح فیصلہ کیا جائے ‘‘۔ تاہم گیل نے آج اپنے کولہے پر انجکشن لینے کے بعد تربیتی مشق میں حصہ لیا جو اس ہفتہ کے دوران ان کی پہلی مشق تھی۔ جیسن ہولڈر نے اس خیال کو مسترد کردیا کہ ویسٹ انڈیز واضح طورپر گیل پر منحصر ہے اور کہاکہ کوئی بھی ٹیم اپنے پاس بائیں ہاتھ کے کھلاڑی کی موجودگی پسند کرتی ہے۔ انھوں نے کہا کہ ’’کرس کا کھیل خود اُن کی تعریف بیان کرتا ہے ۔ وہ دنیا کے ایک خوفناک بیٹسمین ہیں چنانچہ کرس کا اسکواڈ میں شامل رہنا ہر کسی کا فائدہ ہے ۔ اس طرح ان ( کرس ) کا موجود رہنا ہی ہمارے لئے ایک اہم ہے ‘‘۔ اس کلیدی کوارٹر فائنل میں ویسٹ انڈیز کے پاس اگرچہ کھونے کیلئے کچھ نہیں ہے لیکن اس کے خلاف کھیلنے والے نیوزی لینڈ کی ٹیم اس ٹورنمنٹ کی معاون میزبان ہونے کے سبب توقعات کے شدید دباؤ میں ہے ۔ اس ٹیم نے آسٹریلیا کیخلاف ایک وکٹ سے کامیابی کے سواء دیگر تمام میچوں میں حریفوں کے خلاف بھاری اسکور سے فتح حاصل کی ہے ۔ یہ اگرچہ ایک ناک آؤٹ میچ ہے لیکن نیوزی لینڈ کے کپتان برنڈن میک کلم نے وعدہ کیا ہے کہ ان کی ٹیم جارحانہ انداز میں کرکٹ کا کھیل جاری رکھے گی ۔

TOPPOPULARRECENT