Friday , November 24 2017
Home / جرائم و حادثات / ویسٹ زون میں اے سی پی سطح کا عہدیدار پر رشوت وصولی کا الزام

ویسٹ زون میں اے سی پی سطح کا عہدیدار پر رشوت وصولی کا الزام

پی ڈی ایکٹ کا مستحق ملزم بچ گیا، دوسرا شخص بلی کا بکرا، پولیس کے کردار پر شکوک و شبہات

حیدرآباد ۔ 5 اگست (سیاست نیوز) شہر میں غیرسماجی اور غنڈہ عناصر کی غیرقانونی سرگرمیوں پر روک لگانے اور عام شہریوں کو پرسکون ماحول فراہم کرتے ہوئے جرائم کی روک تھام کے اقدامات کے تحت پولیس پی ڈی ایکٹ کو لازم قرار دے رہی ہے۔ تاہم دوسری طرف پی ڈی ایکٹ چند پولیس عہدیداروں کیلئے چاندنی کا سبب بن رہا ہے۔ ایک ایسا ہی واقعہ شہر کے ویسٹ زون علاقہ میں پیش آیا جہاں پی ڈی ایکٹ سے گڑمبہ عناصر کو بچانے کیلئے اے سی پی سطح کے عہدیدار کو مبینہ طور پر بھاری رقم ادا کی گئی۔ ایک شراب کی دکان کے مالک کی انتھک جدوجہد سے گڑمبہ فروخت کرنے والے عناصر کو بچا لیا گیا اور کسی اور کو بلی کا بکرا بناتے ہوئے پی ڈی ایکٹ کے مستحق شخص کو محفوظ کردیا گیا اور درمیانی شخص شراب کی دکان کے مالک اور ڈیویژن سطح کے اس اعلیٰ پولیس عہدیدار میں مصالحت کے بعد مبینہ طور پر دو کانسٹیبل ملازمین نے اپنا کردار ادا کیا اور رقم کو مبینہ طور پر ایک طرف سے دوسری طرف منتقل کرتے ہوئے اپنی حصہ داری حاصل کی۔ شراب کی غیرقانونی فروخت کے ساتھ ساتھ پی ڈی ایکٹ کا مستحق تصور کئے جانے والا شخص گڑمبے کا کاروبار بھی کرتا ہے اور پولیس اس کے خلاف کئی مرتبہ کارروائی کرچکی ہے۔ پولیس عہدیداروں کی جانب سے سخت گیر قوانین کے استعمال میں  اپنی چالان بنانے کے اقدامات اور ایسے کئی واقعات پائے جاتے ہیں۔ تاہم پولیس عہدیداروں کے اس طرح کے کردار اور مشکوک کارروائیوں سے عوام میں بے چینی پائی جاتی ہے؟

TOPPOPULARRECENT