Thursday , December 14 2017
Home / Top Stories / ویٹرن سی پی آئی لیڈر اے بی بردھن کا انتقال

ویٹرن سی پی آئی لیڈر اے بی بردھن کا انتقال

وزیراعظم ، صدر کانگریس و متعدد قائدین کا خراج، کل آخری رسوم
نئی دہلی ، 2 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) ویٹرن کمیونسٹ پارٹی آف انڈیا (سی پی آئی) لیڈر اے بی بردھن کا جنھوں نے 1990ء کے دہے میں قومی سطح پر مخلوط سیاست کے بہت مشکل دور میں پارٹی کو آگے بڑھایا، طویل علالت کے بعد آج رات یہاں جی پی پنت ہاسپٹل میں انتقال ہوا۔ 92 سالہ اردھیندو بھوشن بردھن جن کے پسماندگان میں فرزند اشوک اور دختر الکا شامل ہیں، پارٹی کی طرف سے بتایا گیا کہ دوشنبہ 4 جنوری کو اُن کی آخری رسوم ادا کی جائیں گی۔ سی پی آئی لیڈر کو گزشتہ ماہ لقوہ سے دوچار ہونے کے بعد یہاں واقع جی پی پنت ہاسپٹل میں شریک کرایا گیا تھا۔ اُن کی شریک حیات اور ناگپور یونیورسٹی کی پروفیسر کا 1986ء میں ہی انتقال ہوگیا تھا۔ بردھن 1957ء میں انتخابی سیاست میں داخل ہوئے جب انھوں نے مہاراشٹرا اسمبلی چناؤ میں آزاد امیدوار کی حیثیت سے کامیابی حاصل کی تھی لیکن انھیں لوک سبھا اور راجیہ سبھا الیکشن میں کامیابی نہیں ملی۔ بعد میں وہ ہندوستان کی قدیم ترین ٹریڈ یونین ’آل انڈیا ٹریڈ یونین کانگریس‘ کے جنرل سکریٹری اور پھر صدر بنے۔ وہ 90ء کے دہے میں دہلی کی سیاست کو منتقل ہوئے اور سی پی آئی کے ڈپٹی جنرل سکریٹری بنے۔ وہ 1996ء میں پارٹی کے جنرل سکریٹری کی حیثیت سے اندرجیت گپتا کے جانشین بنے تھے۔ وزیراعظم نریندر مودی اور صدر کانگریس سونیا گاندھی کے ساتھ ملک بھر سے متعدد قائدین نے جن میں چیف منسٹر ٹاملناڈو جیہ للیتا اور کیرالا کے بھی قائدین شامل ہیں، پارٹی خطوط سے بالاتر ہوکر بائیں بازو کے سینئر ترین لیڈر کو زبردست خراج پیش کرتے ہوئے انھیں ’’پُرجوش کمیونسٹ اور محروم لوگوں کے کاز کا علمبردار‘‘ قرار دیا۔ وزیراعظم مودی نے ٹوئٹ میں کہا ، ’’شری اے بی بردھن کو ہمیشہ پُرجوش کمیونسٹ کے طور پر یاد رکھیں گے جو اپنے نظریہ اور اصولوں کے تئیں مکمل طور پر پابند عہد رہے۔ بھگوان اُن کی آتما کو شانتی دے‘‘۔ سی پی آئی (ایم) جنرل سکریٹری سیتارام یچوری نے کہا کہ بردھن کی سوجھ بوجھ، رہنمائی اور ان کے تجربہ کی کمی محسوس ہوتی رہے گی۔ بی جے پی لیڈر و مرکزی وزیر مختار عباس نقوی، جے ڈی (یو) سربراہ شرد یادو و دیگر نے بھی اظہار تعزیت کیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT