Saturday , December 16 2017
Home / ہندوستان / ٹاملناڈو میں دلت نوجوان کا دن دھاڑے قتل

ٹاملناڈو میں دلت نوجوان کا دن دھاڑے قتل

دوسری ذات کی لڑکی سے شادی کرنے پر انتقام
چینائی / تریپورہ ۔ 14 ۔ مارچ (سیاست ڈاٹ کام) ایک لڑ کی کے والد نے جس کے شوہر کو غیرت کے نام پر برسر عام زد و کوب کر کے ہلاک کردیا گیا تھا ۔ آج خود سپردگی اختیار کرلی جبکہ ایک ویڈیو کلپ میں دیکھا گیا کہ  ضلع تریپورہ میں ایک دلت نوجوان کو تین افراد مارپیٹ کر رہے ہیں۔ اس واقعہ پر دلتوں نے شدید برہمی کا اظہار کیا ہے ۔ لڑکی کے والد نے چینائی سے 300 کیلو میٹر دور واقع ضلع ڈنڈیکل کے سنیلاکوٹائی کی مقامی عدالت میں خودسپردگی اختیار کرلی۔ حملہ میں زخمی لڑکی کوشلیا نے بھی اس واقعہ کیلئے اپنے والد کو مورد الزام ٹھہرایا ہے۔ اس بہیمانہ ہلاکت کے واقعہ ویڈْو ٹیلی ویژن چیانلوں میں بتائی جارہی ہے جس میں یہ دیکھا گیا کہ 22 سالہ شنکر اپنی اہلیہ کے ساتھ ضلع تریپورہ کے اڈوامل پیٹ میں کل جارہے تھے کہ حملہ آوار ان کے قریب پہنچ گئے اور اندھا دھند دونوں کو گھونسے مارنے لگے۔ لیکن مصروف ترین سڑک پر موجود راہگیروں نے مداخلت کرنے کی بجائے تماشہ دیکھتے رہے ۔ بعد ازاں حملہ آواروں نے خون میں لت پت شنکر کی نعش کو سڑک کے کنارے چھوڑ کر موٹر سیکل پر فرار ہوگئے ۔ اس دلخراش واقعہ کی ویڈیو ٹیلی ویژن چیانلوں پر پیش کرنے کے بعد لوگوں میں غم و غصہ کی لہر دوڑگئی جبکہ سیاسی لیڈروں نے شنکر کیہلاکت اور اس کی بیوی پر حملہ کی مذمت کی۔ ٹاملناڈوپر دیش کانگریس کے صدر EVKS ایلان گوان، بائیں بازو کی جماعتوں ایم ڈی ایم کے ، وی سی کے اور ڈی کے نے بھی اس واقعہ کی مذمت کرتے ہوئے مجرمین کی فی الفور گرفتار کا مطالبہ کیا ۔

TOPPOPULARRECENT