Monday , November 20 2017
Home / Top Stories / ٹرمپ اتنے ہی صحت مند ہیں جتنا کہ پیوٹن کا گھوڑا ہے: ہلاری

ٹرمپ اتنے ہی صحت مند ہیں جتنا کہ پیوٹن کا گھوڑا ہے: ہلاری

الفریڈ اسمتھ چیاریٹی ڈنر میں شرکت، اوباما اور مشیل مختلف ریالیوں میں مصروف

نیویارک/واشنگٹن۔ 21 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) ڈیموکریٹک صدارتی امیدوار ہلاری کلنٹن نے آج ری پبلیکن صدارتی امیدوار ڈونالڈ ٹرمپ کا مضحکہ اڑاتے ہوئے انہیں اتنا ہی صحت مند قرار دیا جتنا کہ وہ گھوڑا ہے جس پر صدر روس ولادیمیر پیوٹن سواری کرتے ہیں۔ والڈ ورف ایسٹوریا میں ترتیب دیئے گئے ایک عشائیہ میں کل ٹرمپ اور ہلاری کا آمنا سامنا ہوا تھا جبکہ صرف 24 گھنٹے قبل ہی لاس ویگاس میں تیسرے صدارتی مباحثہ میں بھی ان دونوں کا آمنا سامنا ہوچکا تھا۔ عشائیہ میں دونوں قائدین ایک دوسرے سے صرف چند نشستوں کی دوری پر ہی بیٹھے تھے جو الفریڈ اسمھت چیاریٹی کا 71 واں ڈنر (عشائیہ) تھا۔ امریکہ کی یہ تاریخ رہی ہے کہ صدارتی امیدواروں کے لئے اس نوعیت کے عشائیہ کا اہتمام کیا جاتا ہے جہاں امیدوار ایک دوسرے سے ہلکا پھلکا مذاق کرلیتے ہیں۔ اس وقت وہاں تقریباً 1000 معزز شہری موجود تھے۔ ہلاری کو ٹرمپ کے بعد بولنے کا موقع دیا گیا جس پر انہوں نے مسکراتے ہوئے کہا کہ یہ عجیب بات ہے کہ انہیں ٹرمپ کے بعد آنا پڑا۔ انہوں نے ٹرمپ کو ہدف تنقید بناتے ہوئے کہا کہ شاید اقتدار کی پرامن منتقلی سے ٹرمپ مطمئن نہیں ہوں گے۔

وہاں موجود معزز شہریوں میں گورنر نیویارک اڈریو کومو، میئر ڈی بلاسیو، آرچ بشپ نیویارک تموتھی ڈونس، یو ایس سنیٹر چک  شومر اور نیویارک کے سابق میئر مائیکل برومبرگ بھی شامل تھے۔ دوسری طرف واشنگٹن سے ملنے والی خبروں کے مطابق فلوریڈا میں ایک انتخابی ریالی کے دوران صدر امریکہ بارک اوباما نے ووٹرس سے اپیل کی کہ وہ ہلاری کلنٹن کو ووٹ دیں اور کہا کہ ہلاری ان تمام صلاحیتوں کی حامل ہیں جو کسی بھی امریکی صدر کے لئے لازم ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہلاری امریکہ کی عظیم ترین صدر ثابت ہوں گی کیوں کہ ان کے (ہلاری) پاس خاتون اول ہونے اور سنیٹر ہونے کا اعزاز ہے جس سے اندازہ لگایا جاسکتا ہے کہ وہ سیاسی طور پر کتنی منجھی ہوئی ہیں۔ بل کلنٹن کے زمانے میں انہوں نے وائٹ ہائوز میں رہتے ہوئے صدر کے ذریعہ انجام دیئے جانے والے فرائض کا قریب سے جائزہ لیا ہے اور وہ جانتی ہیں کہ ملک کے مفاد کے لئے کونسا فیصلہ کب کرنا چاہئے۔ انہوں نے اپنا ہوم ورک اچھی طرح کیا ہے۔ دریں اثناء فینکس میں ایک انتخابی ریالی سے خطاب کرتے ہوئے خاتون اول مشیل اوباما نے بھی ری پبلیکن امیدوار کو نہیں بخشا اور کہا کہ جو لوگ خود اچھے ہوتے ہیں وہ خواتین کی توہین نہیں کرتے۔
مریکی عوام کو ہوشیار رہنا چاہئے اور ایسے کسی بھی مرد کو برسر اقتدار آنے نہیں دینا چاہئے جو ملک کی خواتین کا احترام کرنا نہ جانتا ہو۔

TOPPOPULARRECENT