Tuesday , December 12 2017
Home / دنیا / ٹرمپ کی تائید میں مہاجر کانگریس کی امن ریالی

ٹرمپ کی تائید میں مہاجر کانگریس کی امن ریالی

واشنگٹن ۔ 18 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) ورلڈ مہاجر کانگریس کے ارکان نے آج وائیٹ ہاؤس کے روبرو امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ کی نئی جنوبی ایشیاء پالیسی کی تائید میں امن ریالی کا اہتمام کیا۔ اپنی پالیسی میں ٹرمپ نے پاکستان کو زبردست تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے دہشت گردوں کی پشت پناہی کا الزام عائد کیا تھا۔ ٹرمپ نے گذشتہ ماہ اپنی نئی پالیسی کے تحت افغانستان میں امریکی افواج کی موجودگی کی تائید کی تھی۔ ان کا ماننا ہیکہ امریکی فوج کو افغانستان سے واپس طلب کرنے کے بعد القاعدہ اور دولت اسلامیہ جیسی دہشت گرد تنظیمیں وہاں مزید سرگرم ہوجائیں گی لہٰذا ٹرمپ کا یہ عزم اپنی جگہ مسلمہ نظر آتا ہے کہ وہ جنوبی ایشیاء میں دیرپا قیام امن کیلئے دہشت گردی کو کسی بھی صورت یا شکل میں پنپنے نہیں دیں گے۔ ٹرمپ کے مطابق امریکہ پاکستان کو کروڑوں ڈالرس کی امداد دیتا آرہا ہے تاکہ دہشت گردی کے خلاف پاکستان اپنی لڑائی میں اس سرمایہ کو استعمال کرسکے لیکن نتیجہ اس کے برعکس ہے۔ پاکستان دہشت گردوں کو محفوظ پناہ گاہیں فراہم کررہا ہے جن کے خلاف امریکہ نبردآزما ہے۔ اس موقع پر ورلڈ مہاجر کانگریس (WMC) کی جانب سے ایک بیان جاری کیا گیا کہ کانگریس اس وقت امریکی حکومت اور امریکی عوام کے ساتھ ہے اور ایک ایسے وقت جب نہ صرف امریکہ بلکہ دیگر اہم ممالک کو بھی سخت گیر مذہبی انتہاء پسندی اور دہشت گردی کا سامنا ہے۔ یاد رہیکہ مہاجر عربی کا لفظ ہے جو ہجرت کرنے والوں کے لئے استعمال کیا جاتا ہے۔ 1947ء میں تقسیم ہند کے وقت ہندوستان سے پاکستان ہجرت کرنے والوں کو آج بھی مہاجر ہی کہا جاتا ہے۔ آج کراچی، حیدرآباد اور صوبہ سندھ کے دیگر شہروں میں مجموعی طور پر 50 ملین مہاجر آباد ہیں۔ لہٰذا پاکستان سے دہشت گردوں کے محفوظ ٹھکانوں کو تباہ و تاراج کرنے امریکی حکومت کی مساعی کی بھرپور تائید کرتے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT