Wednesday , December 13 2017
Home / دنیا / ٹرمپ کی سابقہ بیوی نے بھی خود کو خاتون اول کہا

ٹرمپ کی سابقہ بیوی نے بھی خود کو خاتون اول کہا

واشنگٹن ۔ 10 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) امریکی خاتون اول میلانیا ٹرمپ نے آج اپنے صدر، شوہر ڈونالڈ ٹرمپ کی پہلی بیوی ایوانا پر یہ الزام عائد کیا کہ وہ (ایوانا) حالیہ دنوں میں کچھ ایسی حرکتیں کررہی ہیں جن سے یہ ظاہر ہوتا ہیکہ وہ عوام اور میڈیا کی توجہ اپنی جانب مبذول کرنا چاہتی ہیں۔ انہوں نے کچھ روز قبل اپنی یادوں پر مشتمل ایک کتاب کی فروخت کے وقت خود کو ازراہ مذاق امریکہ کی خاتون اول سے تعبیر کیا تھا۔ ’’ریزنگ ٹرمپ‘‘ نامی اپنی کتاب کو پروموٹ کرنے کیلئے اے بی سی نیوز کو دیئے گئے ایک انٹرویو میں 68 سالہ ایوانا نے ازراہ مذاق کچھ ایسے جملے کہے جس سے وہ یہ باور کروانا چاہتی ہیں کہ وہ امریکہ کی خاتون اول ہیں۔ یہ بات انہوں نے اس وقت کہی جب انہوں نے ٹرمپ کے ساتھ اپنے دیرینہ تعلقات کے بارے میں تفصیلات بتائیں۔ ایوانا نے مسکراتے ہوئے کہا تھا کہ ان کے پاس وائیٹ ہاؤس کا نمبر موجود ہے اور وہ چاہیں کو راست طور پر کال کرسکتی ہیں لیکن وہ ایسا اس لئے نہیں کررہی ہیں کیونکہ میلانیا وہاں موجود ہے اور وہ (ایوانا) نہیں چاہتیں کہ میلانیا کو حسد ہو کیونکہ اگر حقیقتاً دیکھا جائے تو وہ ہی خاتون اول ہیں۔ او کے، میں ہی فرسٹ لیڈی ہوں۔ دوسری طرف میلانیا ٹرمپ کی خاتون ترجمان اسٹیفانی گریشام نے بھی میلانیا کا دفاع کرتے ہوئے کہا کہ 47 سالہ میلانیا ایک خاموش طبع اور اپنے کام سے کام رکھنے والی خاتون ہیں۔ انہوں نے صدر ٹرمپ اور اپنے بیٹے بیرن کی خاطر وائیٹ ہاؤس کو اپنا گھر بنایا۔ بیرن ڈونالڈ ٹرمپ کا سب سے چھوٹا بیٹا ہے۔ میلانیا اپنی سرکاری حیثیت کو مستحق بچوں کی مدد کیلئے استعمال کرنا چاہتی ہیں ناکہ کسی کتاب کے پرموشن کیلئے۔ گریشام نے مزید کہا کہ ٹرمپ کی سابقہ بیوی ہونے کے ناطے ان کے بیانات پر کان دھرنے کی ضرورت نہیں۔ بدقسمتی سے ایوانا جو بھی کررہی ہیں وہ محض میڈیا کی توجہ حاصل کرنے کی ایک ناکام کوشش کے سواء کچھ نہیں۔

TOPPOPULARRECENT